کون چاہتا ہے کہ پاکستان پر تلوار لٹکتی رہے

فیٹف کے پاکستان کو گرے لسٹ میں رکھنے اور اضافی 6 نکاتی ایکشن پلین  دینے کے فیصلے پر اظہار خیال کرتے ہوئے  وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ ہوسکتا ہے کہ کچھ قوتیں چاہتی ہوں کہ پاکستان پر تلوار لٹکتی رہے۔

یہ بات وزیر خارجہ نے نجی ٹی وی چینل کو انٹرویو کے دوران کہی انہوں نے کہا کہ دیکھنا ہوگا کہ فیٹف ایک ٹیکنیکل فورم ہے یا ایک پولیٹیکل فورم ہے یا کچھ قوتیں کہیں اس کو سیاست کے لیے تو استعمال نہیں کر رہیں۔

اگر تو ٹیکنیکل فورم ہے اور جو ہم سے مطالبہ کیا گیا ،ہم سے  تقاضے کیے گئے ،ہمیں 27نکاتی ایکشن پلان  دیے گئےاور انہوں نے خود اس بات کا اعتراف کیا کہ ہم نے ان 27 میں سے 26 کو پورا بھی کردیا اور 27ویں پر بھی ہم نے کافی پیش رفت کی ہے اور اسے جلد مکمل کرنے کا ارادہ ہے۔

انہوں نے مزید کہاکہ اس صورتحال کو مد نظر رکھتے ہوئے فیٹف کو پاکستان کو گرے لسٹ میں رکھنے کی کوئی گنجائش نہیں رہ گئی تھی اب یہ اور بات ہے کہ کچھ قوتیں چاہتی ہوں  کہ پاکستان پر ایک تلوار لٹکی رہے۔

شاہ محمود قریشی نے واضح کیا کہ ہم نے جو کچھ بھی کیا اور انشاءاللہ آئندہ بھی کریں گے وہ اپنے مفاد کے لیے کریں گے اور ہمارا مفاد یہ ہے کہ  منی لانڈرنگ نہ ہو۔

پاکستان کامفاد یہ ہے کہ وہ چاہتا ہے کہ ٹیرر فائنانسنگ کا سد باب  ہو اور وہ ہم کریں گے،کیونکہ ان چیزوں سے پاکستان کا نقصان ہوتا ہے  اور ہم ایسانہیں ہونے دیں گے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button