ہیٹ ویو ہو یا بارش کے الیکٹرک کی ایک ہی روش

https://i.dawn.com/primary/2019/04/5cb43e23ee23d.jpg

کل کراچی میں دوہرا اندھیرا  چھا گیا،ایک طرف تو کالے بادلوں اور دھول کے طوفان  کے  باعث  دن میں رات کا سماں ہوگیا تو دوسری جانب   چند منٹوں کی بارش کے بعد کے  الیکٹرک کے 900 سے زائد فیڈرز  بند ہونے سے  اندھیرا دوگنا ہوگیا۔

بارش سے پہلے ہیٹ ویو میں میں بھی شہری بجلی کے باعث پریشان رہے اور  صرف آدھے گھنٹے کی بارش  ہوئی اور آدھا کراچی شہر بجلی سے محروم ہوگیا، نارتھ ناظم آباد ،ناظم آباد ،اورنگی ٹاؤن ،نارتھ کراچی ،فیڈرل بی ایریا ،گورنگی،سرجانی ٹاؤن ،گلشن اقبال،اسکیم 33 سمیت کراچی کے  بہت سے علاقوں میں بجلی  کی سپلائی معطل ہوگئی،بجلی سے استثنیٰ والے علاقوں میں بھی لوڈ شیڈنگ  جاری رہی۔

مختلف علاقوں میں بجلی کے تار ٹوٹ گئے ،اورنگی ٹاؤن 4 نمبر میں بجلی کا پول  پی ایم ٹی سمیت گر گیا ۔

کے الیکٹرک سے اس بد انتظامی کی شکایت کی گئی تو  ترجمان کے الیکٹرک نے جواب دیا کہ  جن علاقوں میں کُنڈوں کی بہتات ہے وہاں حفاظتی انتظامات کے پیش نظر بجلی کی سپلائی بند کی گئی ہے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ آندھی کے دوران اہم اسپتالوں ، کے ڈبلیو ایس بی پمپنگ اسٹیشنوں اور کراچی ایئرپورٹ سمیت اسٹریٹجک تنصیبات کو بجلی کی فراہمی بلاتعطل جاری رہی ہے۔ اس غیر معمولی صورتحال کے دوران ، ہم نے عوام سے بھی درخواست کی کہ وہ ٹوٹی ہوئی تاروں سے دور رہیں ، ٹرانسفارمروں کے نیچے پناہ لینے یا بارش اور ہوا کے موسم میں بجلی کے کھمبوں کے قریب کھڑے  ہونے سے بچیں ،تاکہ حادثات سے بچ سکیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button