ٹرمپ فیس بک استعمال نہیں کر سکتے

فیس بک نے جمعہ کے روز سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو اپنے پلیٹ فارم کے استعمال سے کم سے کم دو سال کے لئے معطل کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ وہ امریکی دارالحکومت پر اپنے حامیوں کے ذریعہ ایک جان لیوا حملہ کروانے اور فیس بک قواعد کی خلاف ورزی کرنے پر زیادہ سے زیادہ سزا کے مستحق ہیں ۔

عالمی امور کے فیس بک کے نائب صدر نک کلیگ نے ایک بیان میں کہا کے مسٹر ٹرمپ کی معطلی ان حالات کو دیکھتے ہوئے کی گئی ہے جس کے تحت ہم سمجھتے ہیں کہ ٹرمپ کے اقدامات سے ہمارے قواعد کی سخت خلاف ورزی ہوئی ہے ، جو ہمارے نزدیک سب سے زیادہ سزا دینے کے قابل ہے ۔

فیس بک نے یہ بھی کہا ہے کہ وہ سیاستدانوں کو ان کے تبصرے غیر معیاری ہونے کی بنا پر سوشل نیٹ ورک پر کسی بھی صورت قوانین میں کم سے کم استثنیٰ بھی نہیں دیں گے ۔

کیلیگ کے مطابق ، ٹرمپ کی دو سالہ پابندی کے اختتام پر ، فیس بک چند ماہرین کو اس بات کا جائزہ لینے کے لئے نامزد کرے گا کہ آیا سوشل نیٹ ورک پر ان کی سرگرمی اب بھی عوامی تحفظ کے لیے خطرہ ہے یا نہیں ہے ۔

نمائندہ فیس بک نے مزید کہا ، کے اگر ہم یہ طے کرتے ہیں کہ عوامی تحفظ میں ابھی بھی سنگین خطرہ موجود ہے تو ، ہم ایک مقررہ مدت کے لئے ان پر پابندی کو بڑھا دیں گے اور جب تک کہ اس خطرہ میں کمی واقع نہیں ہوجاتی اس کا ازسرنو جائزہ لیتے رہیں گے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button