بلوچستان اور سندھ کی پانی پر دھمکیاں

پانی کے مسئلے پر بلوچستان اور سندھ میں تنازع شروع ہوگیا ہے ، بلوچستان حکومت کے ترجمان لیاقت شاہوانی نے سندھ کو وارننگ دے دی ہے ۔

انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت بلوچستان کو بنجر کرنا چاہتی ہے ۔ 20 سال سے سندھ بلوچستان کے حق پر ڈاکہ ڈال  رہا ہے ، ہمیں ہمارا پانی پورا نہ ملا تو حب ڈیم کا پانی بند کردیں گے ۔

ترجمان بلوچستان حکومت کے بیان پر سندھ کے وزیر آبپاشی سہیل انور سیال کا ردعمل بھی سامنے آگیا ہے ، انکا کہنا ہے کہ بلوچستان حکومت کے ترجمان ارسا کی زبان بول رہے ہیں ۔

انہوں نے واضح کیا کہ ارسا کی نا اہلی کی وجہ سے صحیح پانی تقسیم نہیں ہورہا ہے ، جب پانی سندھ میں آ ہی نہیں رہا تو بلوچستان کیسے جائے گا ۔

وزیر آب پاشی نے کہا کہ بلوچستان حکومت نے سندھ پر پانی چوری کا الزام لگایا ہے ، بلوچستان کے لوگ ہمارے بھائی ہیں اور ہم نے ہمیشہ سندھ اور بلوچستان دونوں کا مقدمہ لڑا ہے ۔

انور سیال نے کہا کہ اچھا ہوتا کہ ترجمان بلوچستان حکومت ارسا کے سامنے سندھ کا مقدمہ بھی رکھتے ، انہوں نے بتایا کہ گڈو بیراج پر ایک لاکھ 80 ہزار کیوسک پانی ہوگا تو پانی آگے جائے گا ۔ جبکہ گڈو بیراج پر اس وقت اس حد سے 40 فیصد پانی کم ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button