امریکی فوجی رات گئے اڈہ چھوڑ گئے

افغان کمانڈر کے بیان” افغانستان میں حالات کشیدہ ہیں ” نے نیا پنڈورا باکس کھول دیا ہے،افغان کمانڈر کا کہنا ہے کہ امریکہ نے بگرام  اڈہ رات  گئے بغیر بتائے خالی کیا۔

امریکی فوج کے جانے کا علم دو گھنٹے بعدہوا،امریکی فوج کے جانے کے بعد بڑے پیمانے پر لوٹ مار ہوئی ، امریکی فوج پہلے بتاتی تو لوٹ مار سے بچا جا سکتا تھا۔

افغان میڈیا کے مطابق امریکہ  نے بگرام ایئر بیس رات کی تاریکی میں بغیر بتائے خالی کیا،روانگی کے وقت ہوائی اڈے کی روشنیاں بند کیں اور نئے افغان کمانڈر کو آگاہ بھی نہیں کیا ۔

ترجمان امریکی محکمہ خارجہ کا کہنا ہے کہ طاقت کے ذریعے مسلط حکومت کو دنیا قبول نہیں کرے گی، اُدھر طالبان نے افغانستان کے 100 سے زائد اضلاع پر کنٹرول حاصل کرلیا ہے۔

سرحدی علاقوں پر فورسز اور طالبان کے درمیان  جھڑپیں جاری ہیں ، 1000 سے زائد اہلکار جان بچانے کے لیے تاجکستان میں داخل ہوگئے ہیں۔

دوسری جانب قطر میں طویل تعطل کا شکار مذاکرات دوبارہ شروع ہوگئے ہیں، اقوام متحدہ کے امدادی مشن کے سربراہ بیبونا لیونز نےقطر میں طالبان کی مذاکراتی ٹیم سے امن و امان پر تبادلہ خیال کیا۔

طالبان کا اگلے ماہ افغان حکومت کو تحریری امن تجویز پیش کرنے کا منصوبہ ہے، ترجمان افغان طالبان ذبیح اللہ مجاہد کہتے ہیں کہ آئندہ دنوں میں امن مذاکرات میں تیزی لائی جائے گی۔

ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ میدان جنگ میں مضبوط پوزیشن کے باوجود مذاکرات کے لیے سنجیدہ ہیں، توقع ہے مذاکرات امن مرحلے میں داخل ہوں گے ۔

سنجیدہ مذاکرات

اس موقع پر امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے فریقین پر زور دیا کہ وہ سنجیدہ مذاکرات کریں تاکہ تاکہ افغانستان کا سیاسی روڈ میپ طے کیا جاسکے ۔

اِدھر پاکستان میں طورخم بارڈر سے ہر قسم کی آمدو رفت پر پابندی لگادی گئی ہے، وزیر داخلہ شیخ رشید کہتے ہیں کہ این سی او سی کی ہدایت پر طورخم بارڈر بند کردیا ہے۔

امیگریشن مرکز ہر قسم کی آمدو رفت کے لیے تب تک بند رہے گا جب تک کہ این سی او سی کی طرف سے نئی ہدایات وزارت داخلہ کو موصول نہیں ہوجاتیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button