ٹی ایل پی والے وزیر آباد تک پہنچ گئے

لاہور: تحریک لبیک تنظیم کے لانگ مارچ کے باعث راولپنڈی میں 11 روز سے راستے بند ہیں جبکہ مری روڈ پر جگہ جگہ کنٹینرز کھڑے کرکے دونوں اطراف ٹریفک کیلئے بند کر دی گئی ہیں اس وقت وہ لوگ وزیر آباد پہنچ چکے ہیں ۔

تنظیم کے لاہور سے اسلام آباد جانے والے مارچ نے وزیر آباد میں پڑاؤ ڈال لیا ہوا ہے ۔ وزیر آباد شہر کے دوسری طرف دریائے چناب پر مارچ کے شرکاء کو روکنے کے لیے رکاوٹیں کھڑی کر دی گئی ہوئی ہیں اور اطراف میں خندقیں بھی کھود دی گئی ہیں ۔

مزید یہ کے وزیر آباد سے سیالکوٹ اور گوجرانوالا جانے والے راستے بھی رکاوٹیں لگا کر بند کر دیے گئے ہیں ۔

جبکہ جہاں سے یہ گزر آئے یعنی گوجرانوالا میں ٹرین اور انٹرنیٹ سروس اب تک معطل ہے لیکن شہر میں زندگی معمول پر آنے لگی ہے اور دکانیں کھل گئی ہیں ۔

اسکے علاوہ گوجرانوالہ میں پیٹرول کی فراہمی بھی بحال ہو گئی ہے جبکہ لاہور جانے والے راستے بھی کھول دیے گئے ہیں ۔

تازہ ترین اطلاعات کے مطابق کالعدم تنظیم کے احتجاج کے باعث راولپنڈی میں غیر یقینی صورت حال پیدا ہوچکی ہے ۔

راستے بند ہونے سے شہریوں کو جہاں سفری مشکلات کا سامنا ہے وہیں سبزی منڈی میں گاڑیاں نہ پہنچنے سے اشیاء خورو نوش، سبزیاں اور ہرے مصالحہ جات کی بھی قلت پیدا ہو گئی ہے ۔

جبکہ دوسری جانب راولپنڈی میں مری روڈ کے ارد گرد کے کاروباری مراکز اور بیشتر تعلیمی ادارے بند ہو چکے ہیں اور فیض آباد انٹر چینج سے مریڑ چوک صدر تک مری روڈ دونوں اطراف کنٹینرز لگا کر بند کردی گئی ہیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button