وزیراعظم آزادی صحافت پر کوئی پابندی نہیں لگا رہے

اسلام آباد : پی ٹی آئی کے سینیٹر فیصل جاوید خان ، جو سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے اطلاعات و نشریات کے سربراہ بھی ہیں ، انہوں نے کہا ہے کہ جعلی معلومات آج ایک بڑا چیلنج بن چکی ہیں اور انفارمیشن سسٹم یک طرفہ اور متنازعہ بن چکا ہے ۔

جعلی خبروں کو روکنے کے قوانین کو مضبوط بنانا چاہیے اور پیشہ ورانہ صحافت کے فروغ کے ذریعے مسائل کو حل کیا جانا چاہیے ۔ سینیٹر فیصل جاوید نے منگل کو ایک بیان میں کہا کے ، جعلی خبروں کا پتہ لگانے کے لیے الگورتھم اور ہجوم سورسنگ جیسی ٹیکنالوجی استعمال کی جا سکتی ہے ۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ وزیراعظم عمران خان اظہار رائے کی آزادی پر مکمل یقین رکھتے ہیں اور وزیراعظم پریس کی آزادی پر کوئی پابندی نہیں لگائیں گے ۔

پی ٹی آئی کے منشور میں لکھا گیا ہے کہ وہ آزاد میڈیا کے حق میں ہے ۔ ہمیں یقین ہے کہ میڈیا ذمہ دارانہ صحافت کو یقینی بنانے کے لیے اپنے لیے قوانین بنائے گا ۔

پورے پاکستان میں صحافی اس کالے قانون کے خلاف احتجاج کر رہے ہیں جس میں آزاد پریس کی آواز کو دبانے کی تجاویز پیش کی گئی ہیں ۔ نامور میڈیا اداروں نے نئی قانون سازی کو سخت اور غیر آئینی قرار دیا ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button