نسلہ ٹاور کو آج مکمل طور پر خالی کرا لیا گیا

تازہ ترین کراچی یہاں شارع فیصل پر واقع ٹاور نسلہ کے تمام رہائشیوں نے اپنے اپارٹمنٹس خالی کر دیے ہیں اور اپنا سامان دوسری جگہوں پر منتقل بھی کر دیا ہے ۔

حکومتی ذرائع کے مطابق نسلہ ٹاور میں صرف ایک گھر کا سامان منتقل ہونا باقی رہ گیا ہے جبکہ باقی تمام اپارٹمنٹس خالی کیے جا چکے ہیں ۔

جبکہ دوسری جانب ڈپٹی کمشنر صاحب کراچی کا کہنا ہے کہ 28 اکتوبر سے نسلہ ٹاور کا قبضہ ان کے پاس ہے جبکہ عمارت کو دھماکے سے گرانے کے لیے اشتہار بھی دے دیا گیا ہوا ہے ۔

ان قریبی ذرائع کے مطابق اگر نسلہ ٹاور کو گرانے کے لیے کوئی کمپنی نہ ملی تو عام طریقے سے عمارت کی توڑ پھوڑ شروع کر دی جائے گی ۔

اس بات کا بھی خیال رہے کہ چند روز قبل سپریم کورٹ نے نسلہ ٹاور کو جدید ڈیوائسز کی مدد سے بم دھماکے سے گرانے کے احکامات جاری کیے تھے ۔

اس کے علاوہ دوسری جانب کمشنر کراچی نے نسلہ ٹاور گرانے کا ٹھیکہ دینے کے لیے 8 رکنی کمیٹی قائم کر دی ہوئی ہے ۔

مزید یہ کے عدالتی فیصلے میں کہا گیا تھا کہ نسلہ ٹاور گرانے کے لیے جدید ڈیوائسز کا استعمال کیا جائے، وہ طریقہ کار اختیار کیا جائے جس طرح دنیا بھر میں عمارتیں گرائی جاتی ہیں ۔

معزز عدالت نے مثال دیتے ہوئے کہا ہے کہ جدید ڈیٹونیشن کا استعمال دنیا بھر سمیت بھارت میں بھی استعمال کیا جارہا ہے لہٰذا یقینی بنایا جائے کہ نسلہ ٹاور گرانے کے دوران کوئی نقصان نہ ہو ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button