چینی کی نئی قیمت

وزارت صنعت و پیداوار نے چینی کی فی کلو ریٹیل قیمت 88روپے 24 پیسے مقرر کردی ہے۔وزارت صنعت و پیداوار نے اعلامیے میں کہا کہ  نئی قیمت کا اطلاق فوری طور پر ہوگا۔

اعلامیےمیں یہ بھی کہا گیا کہ منافع خوروں  اور ذخیرہ اندوزوں پر اختیارات کا استعمال کرتے ہوئے چینی کی خوردہ قیمت پیداواری لاگت کے تخمینے پر مقرر کی گئی ہے۔

نئی قیمت میں منافع ٹیکس اور ترسیل کے اخراجات شامل ہیں ۔چینی کی نئی قیمت 15 نومبر 2021 تک مقرر رہے گی۔

کنٹرولر جنرل آف پرائسس نے  وفاقی دارالحکومت اور صوبائی حکومتوں کو ہدایت کی ہےکہ چینی زخیرہ کرنے اور زائد قیمت پر بیچنے کے خلاف کاروائی کی جائے۔

شوگر ملوں،ڈیلرز ،ڈسٹریبیوٹرز اور ریٹیلرز کے خلاف ایکشن لیا جائے۔متعلقہ حکام ہفتہ وار کارکردگی رپورٹ جمع کروائیں۔

وزارت صنعت کے مطابق فیصلہ عوامی مفاد میں ہے۔چینی اشیاء ضروریہ کی فہرست میں شامل ہے۔7 ماہ میں چینی کی قیمت 90 روپے سے بڑھ کر 100 کلو کردی گئی تھی۔

ترجمان وزارت صنعت و پیداوار  کا یہ بھی کہنا تھا کہ شوگر ملوں سے بات کی گئی لیکن ملوں نے رضاکارانہ طور پر قیمت کم نہیں کی جسکے بعد وزارت کو خود اقدام اُٹھانا پڑا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button