شعیب اختر سے بدسلوکی کا معاملہ کافی بگڑ گیا

کراچی : کرکٹ پاکستان کے سابق اسپیڈ اسٹار شعیب اختر کے ساتھ سرکاری ٹی وی پر ہونے والے بدتمیزی کے معاملے پر اب گورنر سندھ عمران اسماعیل بھی میدان میں آ گئے ہیں ۔

اس واقعہ میں دو روز قبل سرکاری ٹی وی کے میزبان ڈاکٹر نعمان نیاز نے لائیو شو کے دوران ویون رچرڈز اور ڈیوڈ گاور کی موجودگی میں شعیب اختر کو شو چھوڑ جانے کا کہا تھا ۔

جبکہ شعیب اختر نے معاملے کو خوش اسلوبی سے حل کرنے کی کوشش کی تھی لیکن جب بات نہ بنی پھر تو انہوں نے شو کو چھوڑنے اور سرکاری ٹی وی سے مستعفی ہونے کا اعلان کر دیا تھا ۔

کرکٹ کے سابق اسپیڈ اسٹار کے ساتھ پیش آنے والے معاملے پر قومی کرکٹرز اور شوبز شخصیات سمیت ہر شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والی شخصیات نے بہت افسوس کا اظہار کیا ہے ۔

اسی لیے وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری کے نوٹس لینے کے بعد پی ٹی وی نے معاملے کی تحقیقات کے لیے انکوائری کمیٹی بھی تشکیل دی ہے ۔

اور پھر اب گورنر سندھ عمران اسماعیل نے بھی سوشل میڈیا پر ڈاکٹر نعمان نیاز کی جانب سے شعیب اختر کے ساتھ بدسلوکی کے واقعے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کے شعیب ہمارا قومی اثاثہ ہیں ۔

جناب عمران اسماعیل کا مزید اس بارے میں کہنا تھا کے ہمیں ایک دوسرے کی عزت کرنی چاہیے اور اگر کسی قسم کا ذاتی مسئلہ ہے تو سرکاری ٹی وی پر اسے ایک طرف رکھ دینا چاہیے ہے ۔

مزید اسکے علاوہ گورنر سندھ کا کہنا تھا کہ ہمارے اسپیڈ اسٹار سے غیر مشروط معافی مانگنا ضرروی ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button