دنیا کی نظریں سی پیک پر لگی ہوئی ہیں ، اسد عمر

وفاقی وزیر منصوبہ بندی ، ترقی اسد عمر نے بدھ کے روز کہا ہے کہ دنیا کی نظریں چین پاکستان اقتصادی راہداری سی پیک پر لگی ہوئی ہیں اور دشمن پاکستان کو نقصان پہنچانا چاہتا ہے ۔

وزیراعظم کے معاون خصوصی خالد منصور کی مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اسد عمر نے کہا کہ سی پیک منصوبوں کی شفافیت ، قرضوں کی پائیداری اور خفیہ قرضوں کے حوالے سے غلط فہمیاں پھیلائی جا رہی ہیں ۔

امریکہ میں قائم ایک تھنک ٹینک کی ایک حالیہ رپورٹ کا جواب دیتے ہوئے ، انہوں نے کہا کے چین نے پاکستان کو قرض دے کر سی پیک کے کچھ منصوبوں میں سہولت فراہم کی ہے ، انہوں نے مزید کہا کہ دوسرے ممالک سے لیے گئے قرضوں کے مقابلے میں کم مارک اپ پر چین سے قرضے لیے گئے ہیں ۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ 74 فیصد بیرونی قرضے بین الاقوامی مالیاتی اداروں سے لیے گئے ہیں ۔

چین سے مہنگے قرضوں سے متعلق تمام افواہوں کی تردید کرتے ہوئے وزیر نے اس بات پر روشنی ڈالی کہ سی پیک کے تحت بجلی کے منصوبوں کی اوسط شرح سود 4 فیصد ہے جبکہ دیگر چینی قرضوں پر مجموعی شرح سود 4.25 فیصد ہے ۔

اسد عمر نے اس بات کا بھی ذکر کیا کہ حکومت نے سی پیک سے متعلق تمام قرضوں کی تفصیلات بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) کے ساتھ شیئر کی ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ آئی ایم ایف ہمارے پروگرام کا ایک حصہ ہے اور سی پیک کے تحت منصوبوں کے حوالے سے تمام تفصیلات پارلیمنٹ میں بھی شیئر کی گئی ہیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button