سوڈانی وزیراعظم نظر بند اور وزرا گرفتار : بغاوت

تازہ ترین : سوڈان میں فوجی بغاوت کے بعد وزیراعظم کو گھر میں نظر بند کردیا گیا ہے جبکہ کئی وزراء گرفتار ہیں ۔

ایک غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق سوڈان کی وزارت اطلاعات نے فوج کی جانب سے وزیراعظم عبداللہ حمدوک کو نظر بند کرکے نامعلوم مقام پر رکھے جانے کی تصدیق کردی ہے ۔

جبکہ سوڈان کے مقامی میڈیا کا کہنا ہے کہ فوج نے کابینہ کے متعدد ارکان کو حراست میں لے لیا ہے جبکہ خرطوم کے گورنر اور دیگر حکام کو بھی حراست میں لیا گیا ہوا ہے ۔

مزید میڈیا رپورٹس کے مطابق سوڈانی وزیر اطلاعات نے اے ایف پی سے گفتگو میں تصدیق کی کہ وزیراعظم کے میڈیا ایڈوائزر، ملک کی سلامتی کونسل کے ترجمان اور دیگرحکام کو گرفتار کر لیا گیا ہوا ہے ۔

ان میڈیا رپورٹس کے مطابق سوڈان میں فوجی بغاوت کے بعد انٹرنیٹ سروس بھی معطل کیے جانے کی اطلاعات ملی ہیں اور ملک میں ابھی صرف 34 فیصد تک انٹرنیٹ سروس بحال ہیں ۔

اور میڈیا رپورٹس میں بتایا جا رہا ہے کے فوج کی جانب سے شہریوں کو گھروں سے باہر نہ آنے کی ہدایت کی گئی ہے ۔

تاہم فوجی بغاوت کے بعد بعض شہروں میں عوام کی بڑی تعداد نے قومی پرچم کے ساتھ احتجاج کیا ہے جب کہ دارالحکومت خرطوم میں احتجاجی مظاہرین نے ٹائر جلا کر سڑکیں بلاک کردیں ہیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button