تاؤتے طوفان کی گجرات میں تباہی

بحر ہند سے اُٹھنےوالے ’’ تاؤتے ‘‘ نامی طوفان نے ہندوستان کی متعدد مغربی ریاستوں میں تباہی مچا دی ہے،بھارت جو پہلے ہی کورونا وائرس  کی زد میں تھا، اب اسے اس طوفان کا بھی سامنا کر نا پڑرہا ہے۔

ٹائیفون تاؤتے  نامی طوفان نے گوا ، گجرات،کیریلا اور مہاراشٹر کو نشانہ بنایا،تاؤتے  بھارت کے لیے 20 برس میں آنے والا خطرناک ترین طوفان ثابت ہوسکتا ہے۔

طوفان کے بھارتی علاقوں سے ٹکرانے کےباعث  متاثرہ علاقوں میں  کئی کئی فٹ اونچی لہریں اُٹھیں اور 210 کلو میٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے ہوائیں چلیں ۔

تیز ہواؤں اور موسلادھار بارشوں کے باعث ممبئی ایئر پورٹ گزشتہ روز سے بند ہے ،مسافر ایئر پورٹ پر پھنس کر رہ گئے ہیں۔

ممبئی کا وانکھیڈکرکٹ اسٹیڈیم بھی اس طوفان کی زد میں آگیا ہے اور اس میں بہت ساری ٹوٹ پھوٹ ہوئی، اسٹیڈیم کو بھاری نقصان ہوا ہے ،طوفان کی وجہ سے اسٹیڈیم کا ایک اسٹینڈ اور سائٹ اسکرین ٹوٹ کر زمین پر گر گئی۔

ریاستیں اور طوفان

ہندوستان کی بہت ساری ریاستیں ’تاؤتے‘طوفان سے متاثر ہوئی ہیں ، اس طوفان کی وجہ سے جان و مال کا بھاری نقصان ہوا ہے۔

گجرات میں بارش اور تیز ہواؤں سے اکیس افراد جان سے گئے،ہزاروں افراد بے گھر ہوگئے ،متاثرہ علاقوں سے شہریوں کو  محفوظ مقامات پر منتقل کیا جارہا ہے۔

"تاؤتے ‘‘ نامی طوفان کی وجہ سے کورونا وائرس کے سینٹرزکو بھی بھاری نقصان کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے،مدھیہ پردیش میں ہسپتال میں کورونا وارڈ کی چھت ٹپکنے کے باعث مریضوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ،کورونا کے مریضوں کو  اسپتال سے محفوظ مقامات پر منتقل کیا جارہا ہے ۔

 گوا میں 700 بجلی کے کھمبے گر گئے اور 200 سے 300 ٹرانسفارمر خراب ہوگئے ہیں ۔  گجرات سے ٹکرانے کے بعد طوفان کا زور ٹوٹنے لگا ہے تاہم  انڈیا کے محکمہ موسمیات نے  بتایا ہے کہ اب یہ طوفان راجستھان پہنچا ہے ، جہاں 12 اضلاع کے لئے پہلے ہی ہائی  الرٹ جاری کیا  گیاتھا،محکمہ موسمیات نے بتایا ہے کہ اس طوفان کی وجہ سے کئی اضلاع میں بہت تیز بارش ہوسکتی ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button