شیخ رشید نے قوم سے معافی مانگ لی

وزیر داخلہ شیخ رشید نے جمعہ کے روز کالعدم تحریک لبیک پاکستان (ٹی ایل پی) کے خلاف کریک ڈاؤن کے دوران سیکیورٹی کی بنیاد پر چند گھنٹوں تک سوشل میڈیا ایپلی کیشنز تک رسائی روکنے سے معذرت کرلی۔

میں بطور وزیر داخلہ معذرت خواہ ہوں کہ ہم نے تین گھنٹے سوشل میڈیا کی سروسز کی فراہمی بند کی کیونکہ کالعدم ٹی ایل پی کی طرف سے ایسی کال کی اطلاعات تھیں کہ شاید یہ جمعے کے بعد نکلتے ، سوشل میڈیا کو معطل کر کے انتشار پھیلانے کے منصوبوں کو ناکام بنادیا ہے، آگے سے ایسا نہیں کریں گے، سارا جمعہ پرسکون گزرا ہے، سارا پاکستان خیریت سے ہے ، یہ کسی جگہ باہر نہیں نکلے۔

پاکستان ٹیلی مواصلات اتھارٹی (پی ٹی اے) کو وزارت داخلہ کی ایک نوٹس کے ذریعے  سہ پہر تین بجے تک ٹوئیٹر ، فیس بک ،واٹس ایپ ، یوٹیوب اور ٹک ٹوک کومکمل مسدود کرنےکی درخواست کرنے کے بعد ملک بھر میں سوشل میڈیا سروسز تقریبا چار گھنٹے معطل رہی۔

شیخ رشید  نے مزید کہا کہ شدت پسند عناصر کے گروپ کے خلاف کریک ڈاؤن جاری رہے گا اورکسی کو بھی کسی بھی قیمت پر قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں ہوگی۔

ہم نے ٹی ایل پی کوایک ممنوعہ تنظیم قرار دے دیا ہے،ہم اس کی تحلیل کے لئے  ہائی کورٹ میں بھی جائیں گے ، ان کے بینک کھاتوں کو بھی منجمد کریں گے اور پاسپورٹ بلاک کردیں گے ۔

وزیر داخلہ نے پولیس ، رینجرز اور دیگر صوبائی حکام کے اہلکاروں کو ملک میں انتشار پھیلا نے میں ملوث عناصر کو شکست دینے پر انہیں خراج تحسین پیش کیا۔

Back to top button