شہباز گل بیوہ کے گھر پہنچ گئے

بیٹی کی شادی میں مدد کے لیے فیصل آباد کی بوڑھی  بیوہ خاتون نے وزیر اعظم کو خط لکھا،جسکے جواب میں معاون خصوصی شہباز گل وزیر اعظم کے حکم پر  امدادی چیک لے کر فیصل آباد پہنچ گئے۔

اس موقع پر شہباز گل کا کہنا تھا کہ پانچ سال سے بوڑھی عورت مرحوم شوہر کے واجبات کی منتظر تھی،دو بیٹیوں کی شادی کے لیے قرض بھی اُٹھایا،وزیر اعظم کی ہدایت پر چیک خود پہنچانے بیوہ کی دہلیز پر آیا ہوں۔

معاون خصوصی نےسرکاری ملازم کی بیوہ کو شوہر کے واجبات کا چیک دیااور   متعلقہ حکام پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا  کہ بہت ہوگیا ،بہت ہم نے غریب عوام کو سسکتے دیکھ لیا،گالیاں ہم نے کھالیں،اب بیوروکریسی کو کام کرنا پڑے گا ورنہ برا انجا ہوگا۔

جو لوگ بھی اس میں ذمہ دار ہیں تف ہے ان کے پیدا ہونے پر کہ ایک خاتون کو انصاف لینے کے لیے، اپنا حق لینے کے لیے وزیر اعظم کے دروازے کو کھٹکھٹانا پڑتا ہے۔

انہوں نے   یہ بھی کہا کہ غریب کے ساتھ کھڑا ہونے والا موجود ہے ایوان کے اندر جس کا نام عمران خان ہے۔انکا کہنا تھا کہ عمران خان وہ ہے جو غریب کی سنتا ہے ،ہم ایسی ہر سلطان بی بی کی آواز سنیں گے   اور جو انکے ساتھ تعاون نہیں کرتا اس کے گلے میں احتساب کا پھندا ڈالیں گے۔

بیوہ عورت نے داد رسی ہونے پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میری کوئی سنتا ہی نہیں تھا پھر میں نے وزیر اعظم کو درخواست کی،انہوں نے میرے پیسے دلوائے،انکا بہت شکریہ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button