سعد رضوی کی رہائی ہوئی یا نہیں

منگل کو لاہور کی کوٹ لکھپت جیل سے حالیہ کالعدم تحریک لبیک پاکستان (ٹی ایل پی) کے سربراہ سعد حسین رضوی کی رہائی کے حوالے سے منگل کو متضاد اطلاعات سامنے آئیں ۔

ٹی ایل پی کے ایک کارکن اور نجی ٹی وی چینل کے مطابق کل 5 بجے سعد رضوی کو رہا کردیا گیا اور رہائی کے بعد کارکنان کے جشن کی ویڈیوز بھی سامنے آئیں ہیں ۔حکومت نے ٹی ایل پی کے سربراہ کی حیثیت سے متعلق کوئی تبصرہ نہیں کیا ہے ، حالانکہ دونوں فریقوں کے مابین بات چیت میں پیش رفت ہوئی ہے ۔

جب سے فرانس میں حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کے گستاخانہ خاکوں کی اشاعت شائع ہوئی تھی تب سے  ٹی ایل پی پاکستان میں فرانسیسی سفیر کو ملک بدر کرنے کے لئے حکومت پر دباؤ ڈال رہی ہے ۔ فرانسیسی سفیر کی ملک بدر کرنے  کی قرار داد پیش کرنے کے لیے ہونے والے  قومی اسمبلی کےاجلاس سے گھنٹوں قبل  سعدرضوی کی رہائی کی خبریں سامنے آئیں۔

قومی اسمبلی  کاخصوصی اجلاس گذشتہ سال نومبر میں ٹی ایل پی اور حکومت کے مابین طے پانے والے معاہدے سے متعلق ہواجس میں تین ماہ میں اس معاملے کا فیصلہ کرنے کے لئے پارلیمنٹ  کے ممبران کو بحث میں شامل ہونا ہے ۔ چونکہ 16 فروری کی آخری تاریخ قریب آ رہی تھی ، حکومت نے معاہدے پر عمل درآمد سے عاجز ہونے کا اظہار کیا تھا اور مزید وقت طلب کیا تھا،اس کے بعد ٹی ایل پی نے اپنا احتجاج ڈھائی ماہ تاخیر سے 20 اپریل تک کرنے پر اتفاق کیا تھا ۔

گذشتہ ہفتے سعدرضوی نے ایک ویڈیو پیغام میں ٹی ایل پی کارکنوں سے کہا تھا کہ اگر حکومت ڈیڈ لائن کو پورا کرنے میں ناکام رہی تو وہ لانگ مارچ شروع کرنے کے لئے تیار ہیں اس اقدام نےحکومت کو 12 اپریل کو ان کی گرفتاری پر اکسایا تھا۔ پولیس نے دو بجے کے قریب  سعد رضوی پر لاہور کے وحدت روڈ پر فائرنگ کی تھی جہاں وہ ایک جنازے میں شرکت کے لئے گئےتھے، مشتعل ہوکر ، ٹی ایل پی نے ملک گیر احتجاج کا مطالبہ جاری کیا تھا ۔

اس سے قبل آج وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے ٹی ایل پی سے بات چیت میں پیشرفت کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت قومی اسمبلی میں فرانسیسی سفیر کی ملک بدر کرنے کے بارے میں ایک قرارداد پیش کرے گی جبکہ پارٹی نے ملک بھر میں ہونے والے تمام احتجاج کو فوری ختم کرنے پر اتفاق کیا  ہے۔

انہوں نے کہا پارٹی کے ساتھ بات چیت جاری رہے گی ا ور چوتھے شیڈول کے تحت ٹی ایل پی کارکنوں کے خلاف درج مقدمات کو بھی واپس لیا جائے گا ، انہوں نے مزید کہا کہ وہ آج دوپہر میں ایک پریس کانفرنس کے ذریعے معاملے کی  تفصیلی بریفنگ دیں گے ۔

Back to top button