حج کے لیے مخصوص ویکسین کی شرط

وفاقی وزیر اسد عمر کا   کہنا ہے کہ ایسا نہیں ہوگا کہ ہر ملک  ویکسین کے حوالے سے اپنی پسند ناپسند بتائے،اگر ہر ملک  نے یہ کرنا شروع کردیا کہ میری پسند کی ویکسین آپ نے نہیں لگائی تو ہم لوگوں کو آنے نہیں دیں گے تواس سے پوری دنیا کو نقصان ہونا ہے،دنیا کو ویکسین کے حوالے سے جلد فیصلہ کرنا ہوگا  ورنہ آگے چل کر بڑامسئلہ ہوگا۔

چینی ویکسین پاکستان کے اندر سب سے زیادہ لگائی جارہی ہے اور یہ سب کو پتا ہونا چاہیے کہ دنیا میں اس وقت سب سے زیادہ  کورونا ویکسین چین سے ایکسپورٹ ہورہی ہے،اگر سعودی حکومت نے مخصوص ویکسینز کی شرط برقرار رکھی تو یہ صرف پاکستان کا مسئلہ نہیں درجنوں ممالک کامسئلہ بن جائے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ فائزر کے بارے میں ہم نے دو دن پہلے فیصلہ کرلیا تھا ،فی الوقت فائزر ہمارے پاس محدود تعداد میں لہذا  اس سال حج پر جانے والوں اور آسٹریلیا کاورک اور اسٹوڈنٹ ویزا رکھنے والوں اور ایسے ممالک کا اسٹوڈنٹ اور ورک ویزا رکھنے والوں کو جہاں چینی کوویڈ 19 ویکسینز کو ناقابل قبول سمجھا جارہا ہے ان کو ترجیحی بنیاد پر  فائزر لگانے کا فیصلہ کیا ہے۔

پچھلے ہفتے پاکستان نے 1 لاکھ امریکی کوویڈ 19 ویکسین فائزر کی دوسری کھیپ کووکس کے ذریعے موصول  کی تھی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button