رمضان میں مہنگائی عروج پر

رمضان کے آنے سے پہلے حکومت پنجاب اور خیبر پختونخواہ کی طرف سے رمضان سستے بازاروں کے قیام کے ذریعے عوام کو ریلیف دینے کا اعلان کیا گیا تھا لیکن رمضان کے آتے ہی  عوام پر مہنگائی کا حملہ ہوگیا، اسلام اباد میں پانچ سستے بازار لگائے گئے ہیں جبکہ خیبرپختونخوا میں مجموعی طور پر 82 سستے بازارقائم کیے جارہے ہیں، پشاور میں مختلف علاقوں میں 5 سستے بازار قائم ہیں، لاہور میں 11 ماڈل بازاروں کو سستے بازاروں میں تبدیل کر کے مجموعی طور پر 30 سستے بازار قائم کیے گئے ہیں ، سستے بازاروں میں بھی چیزیں مہنگی اور سبسڈائز چیزوں کی بازاروں میں قلت ہے ۔

جو قیمتیں حکومت کی طرف سے مقرر کی گئیں تھیں بازاروں میں کوئی چیز ان قیمتوں پر دستیاب نہیں ہے، سبزی ، پھل،مرغی اور گوشت سب کی قیمتوں میں اضافہ کردیا گیا ہے،یوٹیلیٹی اسٹورز پر چینی اور آٹا کی قلت ہوگئی ہے۔

لاہور میں قیمتوں میں اضافے کی شکایت درج کرانے کے لیے ٹول فری نمبر بھی متعارف کرادیا گیا ہے۔کراچی میں بھی رمضان میں دوگنی ہوتی قیمتوں کے پیش نظر شہریوں نے کمشنر  کراچی اور دیگر متعلقہ ادارو ں سے مطالبہ کیا ہے کہ ناجائز منافع خوروں کے خلاف فوری ایکشن لیا جائے۔

Back to top button