پی ٹی آئی کی فتح کی پیشنگوئی

شیخ رشید کہتے ہیں کہ ہارنے والے ہمیشہ پہلے سے ہی شور ڈال دیتے ہیں جس طرح  ہار کے خوف سے مریم نواز اور بلاول بھٹو ابھی سے شور مچارہے ہیں ۔

مریم نواز کے اندر دھرنا دینے کی ایک خواہش تڑپ رہی ہے اور وہ تو 14 اگست یوم آزادی کے دن بھی یہاں دھرنا دینا چاہتے تھے،اب سنا ہے کہ وہ کراچی جارہے ہیں۔

اپوزیشن دھرنے کی تیاری پوری رکھے کیونکہ 25 جولائی کو عمران خان آزاد کشمیر میں حکومت بنانے جارہے ہیں اور وہ آزاد کشمیر میں ہارنے جارہے ہیں ،ہارنے جارہے ہیں،ہارنے جارہے ہیں۔

آپ دھرنے دیں ، ہم آئین اور قانون کے تحت ہر وہ قدم اُٹھائیں گے جسکی قانون ہمیں اجازت دیتا ہے۔

اللہ کے حکم سے پزیرائی

کشمیر میں اللہ کے حکم سے پزیرائی عمران خان کی ہے اور اس ریجن کے جو حالات ہیں اس میں بھی اس بات کی اشد ضرورت ہے کہ کشمیر میں پی ٹی آئی کی حکومت بنے۔

وزیر اعظم عمران خان کو آزاد کشمیر میں 5 جلسے کرنے کی درخواست کی ہے، وزیر اعظم کو 17 سے 19 جولائی تک 3 جلسے کرنا ہیں۔

تحریک انصاف غیر جانبدارانہ اور منصفانہ الیکشن کی ضامن ہے۔وزیر اعظم نے شفاف اور منصفانہ انتخابات کے عزم کا  اظہار کیا ہے ۔

شیخ رشید نے واضح کیا کہ کسی پولنگ اسٹیشن میں فوج تعینات نہیں ہوگی کیونکہ ہم سارے کہتے ہیں کہ الیکشن میں فوج نہ ہو۔

میری 15ویں وزارت ہے اور ہم نے لاتعداد الیکشن لڑے ہیں،ہم نے دیکھا ہے کہ جب آپ جیتے ہوں تو اس پولنگ ایجنٹ کو تو بڑی نکال سکتے ہیں،ہارے ہوئے ہوں تو باہر فوج نہ کھڑی ہو تو باہر ڈبے سارے نکال کر لے جائیں۔

اگر آزاد کشمیر الیکشن کمیشن نے آرمی کی بھی درخواست کی توضرورت پڑنے پر پولنگ اسٹیشن کے باہر فوج تعیناتی کی درخواست کی جاسکتی ہےکہ فوج  ملک کی سلامتی کے لیے ہونے والے الیکشن کی شفاف اور منصفانہ کاروائی کے لیے مدد کریں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button