افغان مہاجرین کی پر امن واپسی

طالبان نے  گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران  افغانستان کے مزید 13 اضلاع پر قبضہ کرلیا ہے،افغان میڈیا کے مطابق طالبان نے قندھار  اور پتیکیا کے مختلف اضلاع کا کنٹرول حاصل کرلیا ہے۔

افغان فورسز نے 9 منصوبوں میں  طالبان کے  خلاف آپریشن کیے،24 گھنٹوں میں افغان فورسز کے آپریشن میں 224 طالبان ہلاک کیے گئے۔

افغان وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ افغان فورسز طالبان کے خلاف آپریشن کے لیے تیار ہیں،افغان شہر فیض آباد میں فورسز آپریشن کے لیے پہنچ گئیں ہیں ۔

اُدھر ا فغان شہر فیروز  کوہ  میں خواتین نے طالبان کے خلاف ہتھیار اُٹھا لیے،افغان خواتین سیکیورٹی فورسز کی ہمایت میں سامنے آگئیں۔

دوسری جانب لاہور جوہر ٹاؤن بم دھماکے کا ماسٹر مائنڈ اور بارود سے بھری گاڑی لانے والا عید گل افغانی نکلا  ۔

جس پر  مشیر قومی سلامتی معید یوسف نے  بیان دیتے ہوئے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ افغان مہاجرین  کی پُر امن واپسی کا راستہ نکالا جائے۔ریاست کس طرح یہ اندازہ لگائے کہ مہاجرین میں کون صحیح ہے اور کون غلط ہے،کوشش ہے کہ افغانستان کے مسئلے کا سیاسی حل نکلے۔

اُدھر وفاقی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بھی اپنی پریس کانفرنس میں کہا کہ افغان مہاجرین کی واپسی کو پیس پراسس کا حصہ بننا چاہیے۔

وزیر خارجہ کا یہ بھی کہنا تھا کہ ہم افغان مہاجرین کی خدمت کرتے ہیں اور افغان حکومت ہم پر ہی  الزام لگاتی ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button