پاکستانی سیاستدان بھی معترف

پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان نے پشاور میں پیدا ہونے والے بالی ووڈ اداکار شہنشاہ جذبات دلیپ کمار کے انتقال کے  سانحہ پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے۔

 عمران خان نے کہا کہ میں انکی سخاوت کو کبھی نہیں بھول سکتا۔ پاکستانی وزیر اعظم نے بتایا کہ ایک وقت میں وہ اپنی والدہ کے نام پر کینسر اسپتال بنانا چاہتے تھے۔ اس دوران انہیں  پیسوں کی کمی کا سامنا کرنا پڑا اور جب انہوں نے دلیپ کمار سے اسکا ذکر کیا تو وہ فوراً مدد کرنے پر راضی ہوگئے۔

عمران خان نے کہا کہ سب سے مشکل مرحلہ کینسر اسپتال کے  لیےابتدائی 10 فیصد رقم  اکھٹا کرناتھا۔ دلیپ کمار کے پاکستان اور لندن میں ہونے والے پروگراموں نے اس رقم کو جمع کرنے میں مدد فراہم کی۔ اس کے علاوہ دلیپ کمار ہماری جنریشن کے لئے سب سے بڑے اور باصلاحیت اداکار تھے۔

دلپ کمار بھی عمران خان کے کرکٹ کیریئر اور خیراتی کاموں کے ہمیشہ معترف رہے۔سینیٹر فیصل جاوید نے وزیر اعظم عمران خان  اور دلپ کمار کی مختلف مواقع کی یادگار تصاویر سوشل میڈیا پرشیئر کردیں۔

دوسری جانب صدر پاکستان ڈاکٹر عارف علوی نے بھی اداکار دلیپ کمار کے انتقال پر تعزیت کی ہے۔ ڈاکٹرعلوی نے ٹویٹ کیا کہ دلیپ کمار کے انتقال کی خبر سن کر بہت دکھ ہوا۔ وہ ایک شاندار فنکار ، ایک شائستہ انسان اور ایک عمدہ شخصیت  کے مالک تھے۔

پاکستانی وزیر فواد چوہدری نے دلپ کمار کی موت کے بارے میں کہا  کہ جسے ملک کے سب سے اعلیٰ سول ایوارڈ نشانِ امتیاز سے نوازا گیا تھا  وہ ایک ممتاز فنکار تھے۔ دلیپ کمار اب ہمارے ساتھ نہیں ہیں۔ انہیں  برصغیر اور پوری دنیا میں لاکھوں لوگوں نے پسند کیا۔ شہنشاہ جذبات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔

گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے بھی دلپ کمار کے ساتھ اپنی تصویر شیئر کردی۔دوسری جانب اداکار کے انتقال پر سابق وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف نے بھی تعزیتی ویڈیو پیغام جاری کردیا۔

دلپ کمار پاکستان کے ٹاپ ٹین ٹوئیٹر ٹرینڈ میں  چھائے ہوئے ہیں۔ پاکستانی عوام کہتے ہیں کہ دلیپ کمار کے انتقال کے بعد ہندی فلموں کا ایک دور ختم ہوچکا ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button