پاکستان کا 13 ملین فائزر ویکسین کا معاہدہ

اسلام آباد : وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان نے کہا کہ پاکستان نے کوویڈ 19 ایم آر این اے ویکسین کی 13 ملین خوراک کی فراہمی کے لئے فائزر بائیوٹیک کے ساتھ معاہدہ کیا ہے ۔

اگرچہ درست ٹائم لائن کے متعلق معلومات دستیاب نہیں ہیں ، پھر بھی توقع کی جارہی ہے کہ فائزر ویکسین کی پہلی کھیپ جولائی میں آجائے گی جبکہ بقیہ 2021 کے آخر تک مہیا کی جائیں گی ۔

نیشنل کمانڈ آپریشن سنٹر (این سی او سی) کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق ، ملک میں اب تک کوویڈ ۔ 19 ویکسین کی تقریبا 13 ملین خوراکیں دی گئیں ہیں ، جس میں لگ بھگ 35 لاکھ افراد کو مکمل طور پر انجکشن لگا دیے گئے ہیں ۔

پاکستان نے اپنی کورونا ٹیکے لگانے کی مہم میں بنیادی طور پر چینی ویکسین – سونوفرم ، کینسو بائیو اور سینوواک کا استعمال کیا ہے اور اس ماہ کے شروع میں 40 سال سے کم عمر لوگوں کو آسٹرا زینیکا ویکسین حاصل کرنے کی اجازت دینا شروع کردی تھی ۔

اسی طرح ، پاکستان روسی اسٹنک وی کی 10 ملین خوراکوں کی خریداری کے آخری مراحل میں ہے ۔ اس کی کھیپ موجودہ مہینے کے آخر یا جولائی کے پہلے ہفتے تک پاکستان پہنچنے کا امکان ہے ۔

اس کے علاوہ این سی او سی نے دو خوراک والی چینی ویکسین کے سلسلے میں رہنما اصولوں پر نظر ثانی کی ہے جس کی وجہ سے خوراکوں کو لگانے کے درمیان فرق کو چھ ہفتوں تک بڑھا دیا گیا ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button