پاکستان آج عالمی دن کی تقریب کا میزبان

پاکستان آج ماحولیات کے عالمی دن کی تقریب کی میزبانی کرے گا، وفاقی دارالحکومت  اسلام آباد کے کنوینشن سینٹر میں تقریب کی تیاریاں مکمل کرلی گئیں،کنوینشن سینٹر کو ہرے پتوں،پودوں اور پھولوں سے سجایا گیا ہے،سینٹر کی تھیم کو ماحول دوست اور ہرا بھرا رکھا گیا ہے۔

کنوینشن سینٹر میں داخل ہونے کی راہداری سے لے کر وزیر اعظم کے خطاب کے ڈائس ،اسٹیج کے اطراف ،ہال میں موجود تمام نشستوں کے ساتھ ہرے بھرے پودوں کو بڑی خوبصورتی سے سجا کر پیغام دیا جارہا ہےکہ پاکستان  ماحولیاتی تبدیلیوں سے متعلق کس قدر حساسیت سے سوچتا ہے۔

تقریب میں چاروں صوبوں کا روایتی رقص بھی پیش کیا جائے گا ،اس تقریب کو نہ صرف پاکستان بلکہ پوری دنیا میں براڈ کاسٹ کرنے کے لیے بھی خصوصی اقدامات کیے گئے ہیں ،قومی میڈیا ،عالمی میڈیا  اور سوشل میڈیا سمیت ملک کے ذرائع ابلاغ کے تمام وسائل کو بروئے کار لاتے ہوئے اس نشریات کو  دنیا میں براڈ کاسٹ کیا جائے گا۔

تقریب کے مہمان خصوصی وزیر اعظم عمران خان ہوں گے  جن کےماحولیاتی تبدیلیوں سے نمٹنے کے لیے اقدامات کو دیکھتے ہوئے  یونائیٹڈ نیشنز نے پاکستان کو اس  دن پر دنیا کی میزبانی  کرنےکے لیے چنا ہے۔

مزید یہ کہ پاکستان میں تعینات دنیا بھر کے سفیروں کو بھی تقریب میں شرکت کی دعوت دی گئی ہے ۔

ماحولیاتی نظام کی بحالی

اس موقع پر 15 عالمی رہنماؤں  نے  پاکستان اور پاکستانی عوام کے نام اپنے اپنے  پیغامات بھیجے،آج کی تقریب میں چینی صدر اور اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل کے پیغامات بھی نشر کیے جائیں گے۔

تقریب میں وزیر اعظم  ماحولیات کے حوالے سے اپنی اب تک کی کامیابیوں اور اپنے اہداف سے متعلق بتائیں گے اور تقریب میں پاکستان کی پہلی ماحول دوست  الیکٹرک موٹر بائیک اور الیکٹرک کار متعارف کرائی جائے گی۔

گزشتہ روز وزیر اعظم عمران خان نے ماحولیاتی نظام کی بحالی سے متعلق اقوام متحدہ کی تقریب سے ورچوئل خطاب میں کہا کہ پاکستان نے   1 ارب درخت لگالیے  ہیں ، 10 ارب درخت لگانا ہدف ہے،ہم خواتین اور نوجوانوں کوشجرکاری مہم کے ذریعے 80 ہزار گرین جابس دے رہے ہیں۔

درختوں کی حفاظت کے لیے ہم مزید 9 قومی پارک بنا رہے ہیں ،پارکس میں جنگلی حیات کا تحفظ بھی یقینی بنایا جائے گا،فضاء میں آکسیجن کی مقدار بڑھانے کے لیے تمر کے جنگلات میں بھی اضافہ کیا جارہا ہے،عالمی برادری سے ایکو سسٹم اور ماحولیات کے تحفظ  کے لیے اجتماعی کردار ادا کرنے کی اپیل کی ۔

Back to top button