پاکستان نے ایک اور ٹرافی جیت لی

اتوار کے روز ہرارے اسپورٹس کلب میں کھیلے جانے والے تیسرے ٹی ٹونٹی میں پاکستان نے زمبابوے کے خلاف ٹی ٹوئنٹی سیریز 24 رنز سے جیت کر سیریز اپنے نام کرلی۔

محمد رضوان اور بابر اعظم نے نصف سنچریوں کے ساتھ ٹیم کو جیت کے لیے بنیاد فراہم کی ،اورحسن علی کی 4/18  اٹھارہ رنز کے عوض چار وکٹوں نے پاکستان کی جیت کو یقینی بنادیا۔

بابر اعظم نے ہرارے اسپورٹس کلب میں ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا ،محمد رضوان اور شرجیل خان اچھے آغاز پر تھے لیکن پانچویں اوور میں شرجیل خان اپنی وکٹ گنوا بیٹھے، تاہم اس کے بعد بابر اعظم نے 124 رنز کی شراکت میں پاکستان کو 162 رنز کے مجموعی اسکور پر پہنچا دیا، محمد رضوان 91 رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے ،محمد رضوان نے 60 گیندوں پر 91 رنز کی عمدہ اننگ کھیلی جبکہ بابر اعظم نے 46  گیندوں پر 54 رنز بناتے ہوئے زمبابوے کو ہرارے اسپورٹس کلب میں تیسرے ٹی 20 میں 166 رنز کا ہدف دیا۔

ہدف کے تعاقب میں 1/102 کے مجموعی اسکور کے ساتھ زمبابوے مستحکم آغاز پر تھا،اوپنرز ویسلے مدھیویر اور تاریسائی مساکندا نے پاکستان کی تیز گیندوں کا مقابلہ کرتے ہوئے رن ریٹ کو برقرار رکھا ہوا تھا، تاہم حسن علی نے پاکستان کو پانچویں اوور میں کامیابی فراہم کی ، انہوں نے ترسئی موساکنڈہ کو 10 رنز بنا کر واپس بھیج دیا ، ویسلے مدھیویر نے ، اپنی 38 گیندوں کی مدد سے اپنی نصف سنچری بنائی۔

تدیانوشی ماروعمانی نے اسکور کارڈ کو متحرک اور زمبابوے کی امیدوں کو زندہ رکھنے کے لئے 50 رنز بنائے، لیکن تدیانوشی ماروعمانی کے جانے کے بعد میزبان ٹیم کی امیدیں دم توڑ گئیں، زمبابوے نے تواتر کے ساتھ وکٹیں گنوائیں تو وہ میچ 24 رنز اور ٹی 20 سیریز 1-2 سے ہار گیا ۔

حسن علی کو میچ جبکہ محمد رضوان کو سیریز کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا اور اس میچ کے ساتھ ہی بابر اعظم نے ورات کوہلی کا ایک اور اعزاز اپنے نام کرلیا وہ ٹی ٹوئنٹی کرکٹ میں تیز ترین دو ہزار رنز بنانے والے پہلے کھلاڑی بن گئے۔

Back to top button