خواجہ سعد رفیق کے خلاف نیا مقدمہ

نیب ایگزیکٹو بورڈ کی میٹنگ میں  خواجہ سعد رفیق کے خلاف نئی انکوائری کھل گئی ،بطور وزیر ریلوے اختیارات کے غلط استعمال اور انجنوں کی خریداری میں مبینہ بے ضابطگیوں کی  تحقیقات ہوں گی،ریلوے افسران سے بھی  پوچھ گچھ ہو گی۔

چیئرمین نیب نے  کرپشن شکایات پر باقاعدہ انکوائری  کی منظوری دے دی،ایگزیکٹو بورڈ اجلاس میں فیصلہ  کیا گیا کہ  سابق رکن قومی اسمبلی چوہدری شیر علی ،سابق ڈی سی او فیصل آباد نور الامین  مینگل،ہائی ویز ڈیپارٹمنٹ فیصل آباد کے افسران اور سابق  ڈپٹی کمشنر فیصل آباد محمد امین چوہدری  کے خلاف بھی انکوائری ہوگی۔

رکن صوبائی اسمبلی  پنجاب سہیل ظفر اور  سابق ٹاؤن ناظم گوجرانوالہ  رضوان  ظفر کے خلاف انکوائری عدم شواہد پر بند  کردی گئی۔

اجلاس سے خطاب میں چیئرمین  نیب نے کہا کہ نیب اور کرپشن ساتھ ساتھ نہیں چل سکتے،بڑی مچھلیوں کے خلاف وائٹ کالر کرائم  مقدمات کو منطقی انجام تک  پہنچانا اولین ترجیح ہے۔

 انہوں نے مزید کہا کہ آٹا ،چینی ،منی لانڈرنگ اور جعلی  بینک اکاؤنٹ کیسز کو منطقی انجام تک  پہنچایا جائے گا۔

Back to top button