نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام

آج اسلام آباد میں محنت کش طبقے میں گھراورفلیٹس الاٹ کرنے کی تقریب ہوئی۔جسں میں وزیراعظم مہمان خصوصی تھے۔ حکومت پاکستان کی جانب سے نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام شروع کر دیا گیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ نیا پاکستان نئی سوچ کا نام ہے، ملک میں غریب کو گھر کی فراہمی کا کبھی نہیں سوچا گیا، سابقہ ادوار میں حکومتی عدم دلچسپی سےمنصوبہ تاخیر کا شکار ہوا۔ورکرزویلفیئرفنڈز کی عدم فراہمی پر کانٹریکٹر نے منصوبہ ادھورا چھوڑ دیا تھا۔

وزیر اعظم نے پودا لگا کر منصوبے کا افتتاح کیا اور منصوبہ کی تختی کی نقاب کشائی بھی کی ،وزیر اعظم کے معاون خصوصی زلفی بخاری نے وزیراعظم کو بریفنگ دی اور کہا کہ مزدور طبقہ خون پسینہ سے ملکی معیشت چلاتے ہیں۔ نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام غریب کےلیے بہترین اقدا م ہے،اس منصوبے کے تحت محنت کش طبقے کوگھر اور فلیٹس الاٹ کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ ہماری اولین ترجیح  ہے کہ ہم کمزور طبقے کو اوپر اٹھائیں گے،

تنخواہ دار اور مزدور طبقے کیلئےشہروں میں گھر خریدنا ناممکن تھا، نیا پاکستان ہاؤسنگ منصوبے کے تحت1000 سےزائد فلیٹس اور500 مکانات تیار کئے گئے ہیں، محنت کشوں کوپہلی بارمورٹگیج کی بنیاد پراپنی ذاتی چھت دی جارہی ہے ‏5 لاکھ روپے سے کم آمدنی والوں کوفلیٹس اورگھروں کےمالکانہ حقوق دیے گئے ہیں،ورکرز کلاس کیلئے قیمت کی معمولی قسط اورآسان شرائط کوبھی یقینی بنایا گیا ہے، ہماری تعمیراتی صنعت تیزی سے آگےبڑھ رہی ہے۔

عمران خان نے ذلفی بخاری اور ورکرز ویلفیئر فنڈ کی ٹیم کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے اس امر کا اظہار کیاکہ آپ نے 25 سال پرانا پروجیکٹ تیار کردیا ہے۔

عمران خان نے کہا کہ ہم کسی پر احسان نہیں کر رہے، یہ محنت کشوں کا حق ہے، ملک میں کبھی مزدور طبقے کیلئے نہیں سوچا گیا، محنت کش کرائے کے مکان میں رہتے تھے، اب کرایہ قسطوں میں جائے گا اور مکان پران کی ملکیت ہوجائے گا۔

 عمران خان نے کہا کہ نیا پاکستان ہاؤسنگ پروجیکٹ شروع ہوچکا ہے، مجھے خوشی ہے پہلی دفعہ مزدور طبقے کو گھر دے رہے ہیں، امیر ترین ملک بھی گھر نہیں بانٹ سکتے۔

Back to top button