مزاح کے فن کی اکیڈمی : معین اختر

لیجنڈ معین اختر کو ان کی 10 ویں برسی کے موقع پر یاد کیا جارہا ہے ، معین اختر ایک لیجنڈ آرٹسٹ ، اداکار ، مزاح نگار ، میزبان مصنف ، ہدایتکار ، اور پروڈیوسر تھے، انہیں بشریٰ انصاری اور انور مقصود کے ساتھ ریڈیو پاکستان سے بہت شہرت ملی، اس کے علاوہ عظیم فنکار نے کئی طرح کے ٹی وی ڈراموں میں بھی کام کیا ہے ۔

اداکار 24 دسمبر 1950 کو کراچی میں پیدا ہوئے تھے۔ انہوں نے تفریحی صنعت میں اپنے کیریئر کا آغاز 1966 میں 16 سال کی عمر میں کیا، انہوں نے بے شمار کردار ادا کیے تھے جو آج بھی اپنی مثال آپ ہیں۔ تفریح ​​کے بے تاج بادشاہ کو نہ صرف پاکستان بلکہ ہندوستان میں بھی بے حد پذیرائی اور محبت ملی۔

ان کا مشہور شو لوز ٹاک اب بھی دیکھا اور پسندکیا جاتا ہے ، لوز ٹاک میں انہوں نے چار سو سے زیادہ مختلف کردار ادا کیے ہیں خاص طور پر "ابا ہارمونیم بجاتے تھے”، لوگ اب بھی اس کلپ کو سوشل میڈیا پر ردعمل دیتے ہیں اور شیئر کرتے ہیں۔

ان کےدیگر مشہور کرداروں میں ہاف پلیٹ ، سچ مچ، عید ٹرین میں، مکان نمبر 47 ، فیملی ترازو ، سات رنگ ، بندر روڈ سے کیماڑی ، بند گلاب ، اسٹوڈیو ڈھائی ، یس سر نو سر، انتظار فرمائیے، ہیلو ہیلو اور بہت سے دیگر شامل ہیں۔

ان کے مداح اب بھی ان کے اثر انگیز مکالموں اور اداکاری پر تبادلہ خیال کرتے ہیں، اداکاری کے علاوہ انہوں نے اپنی میزبانی کی مہارت سے بھی لوگوں کو متاثر کیا۔اپنی عمدہ مہارت کی وجہ سے انہیں متعدد ایوارڈز سے نوازا گیا، تاہم ان کا 22 اپریل 2011 کو انتقال ہوگیا اور فن کی دنیا کا ایک بہت اہم  رکن اس دنیا سے چلا گیا ۔

Back to top button