میشا شفیع کیس کو التوا میں ڈال رہی ہیں

لاہور کی سیشن کورٹ میں سیشن جج اظہر اقبال رانجھا نے اداکار علی ظفر کی طرف سے میشاء شفیع کے خلاف ہتک عزت کی دائر درخواست پر میشاء شفیع کے گواہوں کو تین 3 اپریل سماعت پر حاضر ہونے کا حکم دے رکھا تھا، گلوکارہ میشاء شفیع کے دو گواہ عدالت میں پیش نہ ہوئے ۔

میشا شفیع کے وکیل نے بتایا کہ مینیجر فرحان علی کوئی ضروری پروجیکٹ کر رہے ہیں اور لینا علی کو دھمکیاں مل رہی ہیں، جسکی وجہ سے وہ پیش نہیں ہوئیں، عدالت نے دونوں گواہوں کی حاضری معافی کی درخواست منظور کرلی اور کاروائی 17 اپریل تک ملتوی کردی ساتھ ہی گواہان کو اگلی سماعت پر پیش ہونے کا حکم جاری کیا ۔

علی ظفر کے وکیل نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ میشا شفیع کیس کو التوا کا شکار کر رہی ہیں۔ میشا شفیع کی والدہ صبا حمید نے میڈیا کو بیان دیا ہے کہ میشا شفیع کیس کو التوا میں نہیں ڈال رہیں، عدالت جب انکو طلب کرے گی وہ حاضر ہو جائیں گی۔

 یاد رہے اداکار علی ظفر نے سوشل میڈیا پر شہرت کو نقصان پہچانے کے الزام کے تحت میشا شفیع کے خلاف 100 کروڑ ہرجا نے کا دعویٰ دائر کر رکھا ہے۔

میشا شفیع نے اپریل 2018 میں علی ظفر پر اپنی ٹوئٹس میں جنسی ہراسانی کے الزام لگائے تھے ۔

Back to top button