ناصر حسین شاہ اور کامینارا کی ملاقات

وزیر اطلاعات سندھ ناصر حسین شاہ سے پاکستان میں تعینات  یورپی یونین کی سفیر کی ملاقات ہوئی۔ فرسٹ پولیٹیکل آفیسر دلارٹیلان بھی ملاقات میں شریک ہوئے۔

اجلاس میں دوطرفہ تعلقات ، چائلڈ لیبر، قوانین برائے مزدور، سیاسی صورتحال ، افغانستان کی سلامتی کی صورتحال اور یورپی یونین کے ذریعہ سندھ میں جاری ترقیاتی منصوبوں پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

وزیر اطلاعات سندھ ناصر حسین شاہ نے کہا کہ یورپی یونین نے  ہمیشہ پاکستان کو مختلف شعبوں میں  تعاون  فراہم کیا ہے۔ حکومت سندھ یورپی یونین کے تعاون کو تسلیم کرتی ہے اور اس کی تعریف کرتی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ افغانستان میں سیکیورٹی کی وجہ سے مہاجرین کی آمد کا خدشہ ہے۔پوری دنیا میں مہاجرین  کو کیمپس میں رکھا جاتا ہے۔بد قسمتی سے یہاں  افغان مہاجرین کے پاسپورٹ اور شناختی کارڈز بنادیے گئے ہیں۔

خدشہ ہے خانہ جنگی کی صورت میں بڑی تعداد میں مہاجرین کراچی کا رُخ کریں گے۔ کراچی پہلے ہی لاکھوں افغان مہاجرین کی میزبانی کر رہا ہے اور اس میں اضافی افغان مہاجرین کا بوجھ اٹھانے کی صلاحیت نہیں ہے۔

وزیر اطلاعات سندھ نے وفاقی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ افغان مہاجرین کو افغانستان کی سرحد کے ساتھ خصوصی کیمپوں میں آباد کریں۔

افغان مہاجرین کی آمد کو روکنے کے لئے افغانستان سے ملحقہ سرحد کو سیل کردیا جائے اور پنجاب ، کے پی اور سابق فاٹا میں کیمپ قائم کیے جائیں۔

امن و امان کو خطرہ

خاص طور پر سندھ میں پہلے ہی آبادی کے مسائل کا سامنا ہے اور وہ زیادہ مہاجرین کی میزبانی نہیں کرسکتا ہے کیونکہ اس سے امن و امان کو بھی خطرہ لاحق ہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت سندھ نے شہریوں کو کورونا سے تحفظ فراہم کرنے کے لئے کوویڈ 19 کی ہنگامی صورتحال میں تمام ضروری اقدامات اٹھائے ہیں اور بڑے شہروں کے علاوہ ضلعی ہیڈ کوارٹر میں بھی ویکسی نیشن کے مراکز قائم کیے ہیں۔ حکومت سندھ اس بات کی کوشش کر رہی ہے کہ صوبے میں ہر ایک فرد کو  ویکسین لگائی جائے۔

انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت کو کووڈ 19 ویکسین کی قلت کا سامنا ہے ، انہوں نے مزید کہا کہ سندھ حکومت نے ویکسین کی براہ راست خریداری کے لئے بہت بڑا فنڈ مختص کیا ہے۔

اس موقع پر  یو  این کی سفیر محترمہ کامینارا نے کہا کہ یوروپی یونین مختلف شعبوں کی ترقی میں پاکستان کو مدد فراہم کرتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ یورپی یونین قرض نہیں بلکہ امداد فراہم کرتی ہے۔

یورپی یونین تعلیم خصوصا تکنیکی تعلیم و تربیت ، خواتین کو بااختیار بنانے ، پانی کی فراہمی میں بہتری کے علاوہ یوروپی یونین کے ممالک اور پاکستان کے مابین تجارتی تعلقات کو مستحکم کرنے میں تعاون کر رہی ہے۔

یو این سفیر نے کہا کہ یورپی ممالک میں پاکستان کے ساتھ تجارت کا حجم 33٪ ہے۔ کوویڈ ۔19 کی ہنگامی صورتحال میں ، پاکستانی مصنوعات کی یورپ کو برآمدات میں اضافہ ہوا ہے۔ محترمہ کامینارا کے ہمراہ یورپی یونین کے پہلے پولیٹیکل آفیسر دلارٹیلان تھے۔ ناصر حسین شاہ نے معزز شخصیات کو روایتی تحائف پیش کیے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button