پورا رمضان مساجد آباد رہیں گی

 گذشتہ شب وزارت وفاقی مذہبی امور کے زیر اہتمام فیصل مسجد میں منعقدہ قومی حفظ و قرآت مقابلے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر وفاقی مذہبی امور پیر نور الحق قادری نے کہا کہ گزشتہ سال ایس او پیز پر سب سے زیادہ عمل درآمد مساجد میں ہوا، اس دفعہ بھی مساجد پنج وقتہ نماز، نماز جمعہ اور تراویح کے لیے آباد ہوں گی اور ایس او پیز پر مکمل عملدرآمد کریں گے۔

اس سے پہلے وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے مذہبی امور طاہر اشرفی نے اس امر کا اظہار کرتے ہوئے بیان جاری کیا تھا کہ مساجد بند کرنے کی کوئی تجویز نہیں ہے۔

رواں سال رمضان میں فیصل مسجد میں قیام الیل میں قرآن سنانے کی سعادت حاصل کرنے کیلئے وزارت نے تمام صوبائی دارالحکومتوں سے حفاظ وقراء کو منتخب کرنے کے لیے اس مقابلے کا انعقاد کیا تھا ۔

پیر نور الحق قادری کا کہنا تھا کہ رمضان المبارک اور قرآن کا آپس میں خاص تعلق ہے، رمضان المبارک کے ساتھ ساتھ عام دنوں میں بھی قرآن پاک کو زیادہ سے زیادہ پڑھا اور سنا جائے، ناچ گانے کے کلچر کو توڑنے کیلیے قران کا کلچر متعارف کرانے کی ضرورت ہے۔

قیام اللیل

انہوں نے بتایا کہ وزارتِ مذہبی امور کے شعبہ دعو ۃ و زیارت ونگ کے زیر اہتمام رمضان المبارک کے آخری عشرے میں قیام اللیل کا اہتمام کیا جا رہا ہے، قیام الیل کی سعادت حاصل کرنے کیلئے وزارت نے تمام صوبائی حکومتوں بشمول گلگت بلتستان، آزاد جموں کشمیر اور ضلع اسلام آباد سے حفاظ کرام کے نام طلب کئے تھے،تمام علاقوں سے ضلعی اور صوبائی سطح کے مقابلوں کے بعد 48 حفاظ وقراء حضرات نے قومی مقابلہ میں حصہ لیا جبکہ صوبہ سندھ میں کرونا وبا کے باعث مقابلہ ملتوی ہو گیا۔

گذشتہ شب کے مقابلے کے بعد 14 حفاظ کرام کا انتخاب کیا گیا ہے جنہیں رمضان المبارک میں فیصل مسجد میں قیام اللیل پڑھانے کا موقع فراہم کیا جائے گا۔

 انہوں نے مزید کہا کہ وزارت مذہبی امور حج کی تیاریوں میں مصروف ہے ۔ حج معاہدے کیلئے سعودی حکومت کے جواب کا انتظار ہے ، سعودی حکومت جیسے ہی بتائے گی ان ایس او پیز پر حج کی تیاریاں مکمل کرائیں گے۔

Back to top button