آسمانی بجلی گرنے سے 60 اموات

بھارتی شہر جے پور میں بارش میں سیلفیاں بناتے ہوئے 12 افراد ہلاک ہوگئے۔تفصیلات کے مطابق راجھستان کے شہر جے پور میں موجود 12 ویں صدی کی یادگار” قلعہ  امر "کے مینار پر 27 لوگ بارش کے دوران سیلفیاں بنارہے تھے،کہ اچانک ان پر آسمانی بجلی آگری  اور کچھ لوگ بروقت چھلانگ لگانے کے باعث بچ گئے اور کچھ موقع پر ہی جاں بحق ہوگئے۔

جے پور پولیس کے ایک افسر نے واقع کے بارے میں بتاتے ہوئے کہا کہ یہ مینار  قلعہ امر میں سیاحوں کی دلچسپی کا مرکز ہے اورحادثے میں   ہلاک ہونے والوں  میں زیادہ تعداد نوجوانوں کی ہے۔

دوسری جانب ریاست اتر پردیش اور راجھستان میں بارش کے دوران  آسمانی بجلی گرنے اور دوسرے حادثوں میں 60 اموات ہوئیں۔صرف پریاگ راج میں آسمانی بجلی گرنے سے 11 افراد لقمہ اجل بنے جبکہ سینکڑوں مویشی بھی مارے گئے۔

راجھستان کی ریاست کے وزیر اعلی  اشوک گھیلوت نے  ہلاک ہونے والوں کے لواحقین کو 5،5 لاکھ روپے معاوضہ دینے کا اعلان کیا ہے۔

بھارت کے محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ بھارت میں 1990 کے وسط کے بعد سے آسمانی بجلی گرنے کے واقعات میں 30 سے 40 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

تین برس قبل 2018 میں آندھراپردیش کے علاقے میں صرف 13 گھنٹے کے دوران 36749 بجلی گرنے کے کیس رپورٹ ہوئے تھے۔

محکمہ موسمیات کا یہ بھی کہنا ہے کہ ماحولیاتی تبدیلی کے باعث آسمانی بجلی گرنے کےواقعات میں اضافہ ہورہا ہے اور یہ واقعات زیادہ ان علاقوں میں ہوتے ہیں جہاں درختوں کی تعداد کم ہوتی ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button