کارگل ہیرو شیر خان شہید

دفاع وطن کا فریضہ نبھاتے ہوئے  پاک فوج کے افسروں اور جوانوں نے کبھی کسی قربانی سے دریغ نہیں کیا،معرکہ کارگل میں دشمن کے خلاف بہادری سے لڑتے ہوئے   وطن پر جان قربان کرنے والے کیپٹن جنرل  شیر خان نشان حیدر کا 22 واں یوم شہادت آج منایا جارہا ہے۔

سال 1992 میں پاک فوج میں کمیشن حاصل کرنے والے کرنل شیر خان کے  دنیا کے بلند ترین محاز جنگ پر دشمن کے عزائم کو خاک میں ملانے پر خود دشمن بھی انکی تعریف کیے بغیر نہ رہ سکا۔

بھارتی فوج نےقوم کے بیٹے  کرنل شیر خان کے جسد خاکی کے ساتھ ایک خط بھی بھیجا جس میں  کرنل کی دلیری کا بھر پور اعتراف کیا گیا تھا۔

صوابی میں  شہید کے مزار پر پُرعقیدت اور خوبصورت دعائیہ تقریب منعقد ہوئی جس میں  آرمی چیف  جنرل قمر جاوید باجود کی جانب سے کمانڈنٹ پنجاب رجمنٹ سینٹر  نے کرنل شیر خان کی قبر پر پھولوں کی چادر چڑھائی۔

شیر خان شہید کے یوم شہادت پر ڈی جی آئی ایس پی آر نے  ٹوئٹر پر پیغام جاری کیا ہے جس میں انہوں نے کہا کہ  کارگل جنگ کے  ہیرو کرنل  شیر خان نے اپنے خون سے تاریخ رقم کی۔

انہوں نے مزید لکھا کہ کیپٹن جنرل شیر خان نے لازوال بہادری اور جرات کا مظاہرہ کیا تھا،مادر  وطن کی حفاظت کے لیے کرنل شیر خان کا جذبہ اٹل تھا۔ ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ ہمیں کرنا  کیپٹن جنرل شیر خان شہید پر فخر ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button