کراچی پہلی بارش سے جل تھل

ہفتے کے پہلے دن کراچی والوں کے ملا گرمی سے تھوڑا سا چھٹکارا جب شہر میں سالانہ مون سون کی بارش کا پہلا سیشن شروع ہوا ۔ تاہم ، بہت سوں کے لئے اس نے گذشتہ سال کی تباہ کن بارشوں کی تکلیف دہ یادیں تازہ کر دیں ۔

اس بارش نے الفلاح سوسائٹی میں ایک چھوٹے لڑکے کی جان لے لی ۔ ایس ایچ او راشد دین نے بتایا کہ حماد اپنی سائیکل پر سوار تھا جب اسے بارش کے پانی کا سامنا کرنا پڑا جو سڑک پر جمع ہوگیا تھا ۔ اس عہدیدار نے بتایا کہ اس دوران ، اس لڑکے نے بجلی کے کھمبے کو چھو لیا اور بجلی کا نشانہ بن گیا ۔

تاہم بہت سے لوگوں نے بارش پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے سب لوگوں کے لیے اللہ سے بھلاِئی کی دعا بھی مانگی اور ٹوئٹر پر کراچی اور مون سون ٹرینڈ بن گیا #karachrain ۔

محکمہ موسمیات کے اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران گلشن حدید میں سب سے زیادہ بارش (17 ملی میٹر) ہوئی ، اس کے بعد پی اے ایف فیصل بیس (5.0 ملی میٹر) ، یونیورسٹی روڈ میٹ کمپلیکس (4.3 ملی میٹر) ، نارتھ کراچی ( 4.2 ملی میٹر) ، لانڈھی (4.0 ملی میٹر) ، سدی ٹاؤن (3.6 ملی میٹر) ، جناح ٹرمینل (3.2 ملی میٹر) ، ایم او ایس – اولڈ ایریا ایرپورٹ (3.0.0 ملی میٹر) ، سرجانی (2.8 ملی میٹر) ، پی اے ایف مسرور بیس (1.0 ملی میٹر) اور ناظم آباد ( 1.0 ملی میٹر) ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button