فلسطین میں 10 ویں روز بھی اسرائیلی درندگی جاری

فلسطین میں اسرائیلی   وحشیانہ بمباری کا سلسلہ 10 ویں روز بھی جاری ہے ،غزہ   میں آج صبح رہائشی عمارت  پر یہودی فورسز کی  بمباری سے عمارت ملبے کا ڈھیر بن گئی اور حملے کے نتیجے میں 4فلسطینی شہید ہوگئے۔

10 روز سے جاری  اسرائیلی بربریت  کے نتیجے میں 220 سے زائد شہید اور 1000 سے زیادہ فلسطینی شدید زخمی  اور 50 ہزار سے زیادہ    بے گھر ہوگئے۔

غزہ میں انفراسٹرکچر  تباہی کا شکار،تجارتی مراکز،شاہراہیں ،ہسپتال اور  سیورج اور پانی کی لائنیں تباہ ہوگئیں،کسی کا گھر نہ رہا تو کسی کا کاروبار نہ رہا ۔

غزہ پر جاری صہیونی بمباری سے پنج کے گودام میں آگ  بھڑک اٹھی سارا مال جل کر تباہ ہوگیا ،ایک   پولٹری فارم  بھی بمباری کی زد میں آکر تباہ ہوگیا۔

پولٹری فارم مالک کا کہنا تھا کہ یہ یہودی فورسز خواتین ،بچوں اور  جانوروں کو مار کر سمجھتے ہیں  کہ یہ کامیاب ہوجائیں گے لیکن یہ ہمیشہ ناکام ہی رہیں گے۔

اقوام متحدہ کے مطابق 58 ہزار فلسطینی اب تک بے گھر ہوچکے ہیں،اسرائیلی  وزیر اعظم کی عالمی برادری کی جنگ بندی کی اپیلوں کے باوجود ہٹ دھرمی برقرار ہے  اور اس نے بمباری جاری رکھنے کا اعلان کیا ہے،جواب میں حماس نے بھی کہا کہ اسرائیلی مظالم کے خلاف مزاحمت کرتے رہیں گے۔

یو این سیکریٹری جنرل  بھی اسرائیلی جارحیت رکوانے میں ناکام ہے  تاہم انہوں نے عالمی برادری سے  فلسطین کو امداد کی فراہمی کی اپیل کی ہے۔

Back to top button