بھارتی دوائیاں اسمگل کرنے والا گروہ

ڈریپ (ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی) لاہور کے ایک نجی ہسپتال میں بڑا آپریشن کرتے ہوئے بیرون ملک ‏سے کورونا کی ادویات اسمگل کرنے والے ایک گروہ کو پکڑ نے میں کامیاب ہوگئی۔

تفصیلات کے مطابق سی ای او ڈریپ ڈاکٹر عاصم کا کہنا ہے کہ ڈریپ اور پنجاب ڈرگ کنٹرول یونٹ نے مشترکہ کارروائی کر تے ہوئےایک گروہ ‏سے کورونا کی اسمگل شدہ مختلف ادویات برآمد کر لیں ہیں ۔

سی ای او ڈریپ نے مزید بتایا کہ ملزم سے ایکٹمرا ، ایمفوٹیریسین ‏انجکشنز، پریوینر ویکسین اور بھارتی ساختہ ادویات برآمد ہوئی ہیں۔

 گرفتار ملزمان میں سے ایک ملزم کے مطابق ان کے  گروہ کے پاس ادویات ‏کاوافرسٹاک موجود ہے اور گروہ کا وہ رکن اسپتال میں مریض کو ادویات دینے آیا تھا۔

ذرائع کے مطابق خفیہ اطلاع پر اسمگلر گروہ کے خلاف کارروائی کی گئی ۔ مزید براں یہ بھی سامنے آیا ہے کہ گروہ کے ایجنٹس ‏اسپتالوں میں اسمگل شدہ  کورونا ادویات پہنچاتے تھے۔

سی ای او ڈریپ کے مطابق  گروہ کورونا کی اسمگل ادویات اصل قیمت سے  کئی گنا زیادہ قیمت میں فروخت کرتا تھا۔

 اسمگلرز کا گروہ ایکٹمرا انجکشن ایک تا ڈیڑھ لاکھ میں فروخت کرتا تھاجب کہ ‏ایکٹمرا انجکشن کی سرکاری قیمت 60000 مقرر ہے۔

سی ای او ڈریپ ڈاکٹر عاصم کا مزید  کہنا تھا کہ غیر قانونی ادویات بیچنے والوں کے خلاف کارروائیاں جاری رہیں گی۔

انہوں نے یہ بھی انکشاف کیا کہ ادویات میں بھارتی ساختہ ادویات بھی شامل ہیں جو ڈیلٹا ویریئنٹ کی وجہ سے ہونے والے بلیک فنگس کے لیے ‏استعمال ہوتی ہیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button