حج 2021 کے لئے ایس ا و پیز جاری

. سعودی وزارت صحت کی جانب سے حج 2021 کے لئے ایس ا و پیز جاری

چین سے اس وبائی مرض کورونا کا آغاز ہوا تھا ، جہاں اس نےتمام شعبہ ہائے زندگی کو مفلوج کر دیا وہیں مسلمانوں کو اپنے دینی مناسک اور فرائض ادا کرنے کے لئے بھی بڑی حد تک رکاوٹوں کا سامنا کرنا پڑا۔ مساجد میں لوگوں کو معمول کے فرائض کی ادائیگی میں اجتماعات کی اجازت نہیں تھی، اسی طرح مکہ اور مدینہ جو مسلمانوں کے مقدس ترین مقامات ہیں وہاں عمرے اور حج پر بھی گزشتہ برس جزوی پابندی تھی۔ پھر آہستہ آہستہ ان مقامات کو انتہائی نگرانی اور سخت ضوابط کے ساتھ کھولا گیا۔ 2020ء کے حج کے موقع پر سعودی بادشاہت کی طرف سے حاجیوں کی تعداد کو بہت کم رکھا گیا تھا۔ جدید تاریخ میں ایسا پہلی بار ہوا تھا کہ غیر ملکوں سے حاجیوں کو حج کے لیے آنے کی اجازت نہیں تھی، صرف ایک ہزار افراد کو حج کی اجازت دی تھی جس میں سعودی شہری سمیت ملک میں رہنے والے دیگر ممالک کے افراد شامل تھے۔

اس سال کے آغاز میں جہاں مختلف ممالک اپنی اپنی انفرادی اندرونی صورتحال اور صلاحیتوں کے اعتبار سے کورونا لاک ڈاؤن میں جزوی نرمی لا رہے ہیں، وہیں سعودی عرب نے سال 2021 کےحج میں کرونا ویکسین لگوانے والے عازمین کو حج کی اجازت دینے کا فیصلہ کیا ہے ، سعودی عرب کی وزارت صحت کی طرف سے کہا گیا ہے، ”کووڈ انیس ویکسین حاجیوں کے لیے لازمی ہے اور یہ اس سال حج کی اجازت ملنے کے ضمن میں سب سے اہم شرط ہو گی، اور ویکسین کے بغیر کسی کو بھی حج کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

گزشتہ ماہ  کورونا وائرس پر قابو پانے کی کوشش کے تحت سعودی عرب کی وزارت داخلہ نے بیس ممالک کے شہریوں کے ملک میں داخلے پر پابندی عائد کردی تھی۔ اس پابندی کے اطلاق میں پاکستان، ترکی اور بھارت بھی شامل تھے۔

سعودی وزارت صحت کے ترجمان ڈاکٹر محمد العبد العلی نے میڈیا سے بات کرت ہوئے بتایا کہ جن لوگوں نے کورونا کی مکمل ویکسینیشن کی ہو گی ان کے لیے قرنطینہ بھی لازمی نہیں ہو گا ۔

Back to top button