پاکستان اور زمبابوے آج آمنے سامنے

پاکستان اور زمبابوے کے درمیان  تین میچوں کی سیریز کا پہلا ٹی ٹوئنٹی آج ہوگا، ٹرافی کی رونمائی کردی گئی ہے۔ واضح رہے پاکستانی ٹیم جنوبی افریقہ کے بعد زمبابوے  کے دورہ پر ہے، جہاں وہ تین ٹی ٹونٹی میچز اور دو ٹیسٹ میچز کھیلے گی ،زمبابوے نے ٹی 20 ورلڈ کپ کے لئے کوالیفائی نہیں کیا ہے ، نہ ہی وہ ورلڈ ٹیسٹ چیمپیئن شپ کا حصہ ہیں۔

پاکستان اور زمبابوے کے درمیان  ہونے والے 14 ٹی ٹوئنٹی  میچز  میں پاکستان کی زمبابوے کے خلاف  جیت کا ریکارڈ 100٪ ہے،گزشتہ سال نومبر میں پاکستان نے  زمبابوے کے خلاف آخری بار ٹی ٹوئنٹی  کرکٹ کھیلی تھی جس میں تینوں میچوں میں پاکستان نے  زمبابوے کے دیے گئے اہداف کا تعاقب کرتے ہوئے جیت حاصل کی تھی۔

متحدہ عرب امارات کے دورہ میں افغانستان سے کھیلنے کے لئے زمبابوے کے کریگ اروائن اور برینڈن ٹیلر ان فٹ ہونے کی بناء پر نہیں کھیل سکے تھے لیکن وہ اس سیریز کے لئے واپس آچکے ہیں،اس جوڑی نے حال ہی میں مکمل ہونے والےقومی ٹی ٹوئنٹی مقابلے میں شاندار کھیل پیش کیا تھا ۔

دورہ زمبابوے میں دونوں ٹیموں کی اسکواڈ لسٹ کچھ اس طرح ہے

زمبابوے (ممکنہ طور پر) : 1 تیناشی کامونہوکاموے ، 2 برینڈن ٹیلر 3 سین ولیمز (کپتان) ، 4 کیریگ ارون ، 5 ویسلے مدھیویر ، 6 ریگیس چکابوا (کیپر) ، 7 ریان برل ، 8 ڈونلڈ تیریپانو ، 9 ویلنگٹن مساکاڈا / تاپیوا مفڈزا 10 برکنگ مزاربانی ، 11 رچرڈ ننگاراوا

پاکستان (ممکنہ طور پر): 1 محمد رضوان (کیپر) 2بابر اعظم (کپتان) ، 3 فخر زمان 4 محمد حفیظ ، 5 حیدر علی ، 6 آصف علی ، 7 فہیم اشرف ، 8 محمد نواز ، 9 حسن علی ، 10 شاہین شاہ آفریدی ، 11 حارث رؤف / عثمان قادر

جنوری 2020 سے ہرارے میں کوئی بین الاقوامی کرکٹ نہیں ہوئی ہے اور جولائی 2018 کے بعد سے کوئی ٹی ٹونٹی نہیں ہوئی ہے۔زمبابوے اور پاکستان نے ایک دوسرے کے خلاف 14 ٹی ٹونٹی میچ کھیلے ہیں ، جس میں پاکستان نے تمام 14 میں کامیابی حاصل کی ہے۔

تاہم ہیڈ کوچ  مصباح الحق  نےمڈل آرڈر کی پرفارمنس کے لیے فکرمندی ظاہر کی ہے کیونکہ  دورہ جنوبی افریقہ میں اوپنرز کی طرف سے اہداف کو پورا کیے جانے کے باعث مڈل آرڈر کو پرفارم کرنے کا موقع نہیں ملا تھا۔ مصباح الحق کا کہنا ہے کہ آصف اور حیدر کی کارکردگی کا جائزہ لیا جائے گا ، انہوں نے انگلینڈ سیریز تک ورلڈ کپ کے ممکنہ کامبینیشن  بنانے کا اظہار کیا۔

Back to top button