قومی اسمبلی میں لڑائی ، ارکان پر پابندی عائد

سات قانون سازوں سمیت تہتر ممبران نے قومی اسمبلی کے قوانین کی خلاف ورزی کی ۔

نیشنل اسمبلی کے اسپیکر اسد قیصر نے وزیر اعظم عمران خان سے اسمبلی میں گردش کرتی افواہوں پر تبادلہ خیال کیا ۔

انہوں نے بتایا کے ان تمام ممبران پر لازم ہے کہ وہ اگلے احکامات تک پارلیمنٹ ہاؤس کے احاطے میں داخل نہ ہوں ۔

اسلام آباد: قومی اسمبلی کے اسپیکر اسد قیصر نے بدھ کے روز اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کی تقریر کے دوران ہنگامہ کرنے پر سات اراکین کے پارلیمنٹ ہاؤس میں داخل ہونے پر پابندی عائد کردی ۔

حکمران جماعت پی ٹی آئی کے تین ارکان اور حزب اختلاف کے چار ممبران نے اسپیکر کی "بار بار ہدایت” کے باوجود قواعد کی "خلاف ورزی” کی ہے۔

لہذا ، اسپیکر نے قومی اسمبلی کے اطراف سے مذکورہ بالا تمام ممبروں کو فوری واپس جانے کا حکم دیا ہے ۔ ان ممبران کو لازم ہے کہ وہ اگلے احکامات تک پارلیمنٹ ہاؤس کے احاطے میں داخل نہ ہوں۔

جن ممبران کو اسمبلی میں داخلہ سے ممنوع قرار دیا گیا ہے ان میں علی گوہر خان (مسلم لیگ ن) ، چودھری حامد حمید (مسلم لیگ ن) ، شیخ روحیل اصغر (مسلم لیگ ن) فہیم خان (پی ٹی آئی) ، عبدالمجید خان (پی ٹی آئی) ، اعوان (پی ٹی آئی) اور سید آغا رفیع اللہ (پی پی پی) اور علی نواز شامل ہیں۔ ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button