پنجاب میں بارشوں کا تیز اسپیل

پنجاب  کے مختلف شہروں میں آندھی اور طوفانی بارشوں  کا سلسلہ جاری ہے  جسکے نتیجے میں کہیں موسم خوشگوار ہوا تو کہیں حادثات  نے جانی و مالی نقصان سے لوگوں کی پریشانی بڑھائی۔

مختلف واقعات میں ایک  دس سالہ بچہ جاں بحق اور 15 افراد زخمی ہوئے، چنیوٹ میں آسمانی بجلی گرنے سے بچہ جان کی بازی ہار گیا۔

خیبر کے علاقے غنڈی میں بوسیدہ کمرے کی چھت گرنے سے 3 افراد جاں بحق ہوگئے،جاں بحق ہونے والوں میں ماں ،بیٹا اور بیٹی شامل ہیں۔

گوپی رائے گاؤں لاہور میں گھر کی دیوار گرنے سے 5 افراد ملبے تلے دب گئے جن میں سے 1  شخص جاں بحق اور 4 زخمی ہوئے۔

ساہیوال میں تیز ہواؤں کے ساتھ طوفانی بارش سے مکان کی چھت گر گئی،4 خواتین اور 5 بچے زخمی ہوگئے جن کو ہسپتال منتقل کردیا گیا۔

گوجرانوالہ میں سرکاری ہسپتال کی چھت  اور دیوار گر گئی،درخت بھی اکھڑ گئے تاہم ہسپتال کا عملہ محفوظ رہا۔

دیبالپور ،شیخوپورہ،چیچہ وطنی اور دیگر شہروں میں طوفانی بارش نے شہریوں کو بجلی سے محروم کردیا،طوفانی ہواؤں اور بارش کے باعث لاہور سمیت مختلف علاقوں میں بجلی کا نظام درہم برہم ہوگیا،متعدد فیڈرز ٹرپ کرگئے  جسکی وجہ سےمتعدد علاقے تاریکی میں ڈوب گئے۔

جھنگ شہر اور گرد و نواح  میں بھی  تیز آندھی کے بعد بارش ہوئی،بارش سے  گرمی کا زور ٹوٹ کر موسم تو خوشگوار ہوگیا لیکن نشیبی علاقے زیر آب آگئےاورشہر کی مرکزی شاہراہیں اور بازار بھی پانی سے بھر گئے اور عوام کو آمد ورفت میں  دشواریوں کا سامنا رہا۔

محکمہ موسمیات نے آج بھی جنوبی پنجاب،بالائی سندھ ، مشرقی بلوچستان،کشمیر،گلگت بلتستان اور خیبر پختونخواہ کے مختلف علاقوں میں تیز بارش کی پیش گوئی کی ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button