فاروق قیصر عرف انکل سرگم ، سپرد خاک

فاروق قیصر عرف انکل سرگم 75 سال کی عمر میں دل کا دورہ پڑنے سے 14  مئی  کو فوت ہوگئے تھے ،گزشتہ روز انہیں اسلام آباد میں سپرد خاک کیا گیا۔

اسلام آباد کے ایچ 11 قبرستان میں تدفین سے قبل ان کی نماز جنازہ میں سیاست دانوں ، فنکاروں اور سول سوسائٹی کے  افراد  نے شرکت کی۔

فاروق قیصر کی آخری رسومات ادا کرنے والوں میں مسعود خواجہ ، بابر نیازی ، اسلم مغل ، سلیم رضا ، انجم حبیبی ، ہاشم بٹ ، طاہر ریمبو ، طاہر صدیقی ، اور سلمان سنی شامل تھے۔

فاروق قیصر جو انکل سرگم کے نام سے مشہور ہیں ، 80 اور 90 کی دہائی کے پاکستانی بچوں کی ہر دلعزیز اور جانی پہچانی شخصیت تھے۔

 31 اکتوبر 1945 کو لاہور میں پیدا ہوئے ، نیشنل کالج آف آرٹس سے گریجویشن مکمل کرنے کے بعد انہوں نے 1976 میں رومانیہ کے بخارسٹ سے گرافک آرٹس میں ماسٹر کی ڈگری حاصل کی اور وہاں کٹھ پتلی کی تربیت بھی حاصل کی  ،بعدازاں 1976 ہی میں پی ٹی وی سے بطور آرٹسٹ اپنے کیریئر کا آغاز کیا۔

بچوں کے شو”  کلیاں” ، "سرگم سرگم "، اور "ڈاک ٹائم "فاروق قیصر کے مشہور ٹی وی شوز ہیں۔

طویل کیریئر کے ساتھ ساتھ قیصر پرائیڈ آف پرفارمنس ایوارڈ (1993) ، لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈ (2010) اور پی ٹی وی کے سلور جوبلی ایوارڈ کے علاوہ بہت سے دوسرے قومی اور بین الاقوامی اعزازات کے حامل بھی تھے۔

انکل  سرگم اور ماسی مصیبتے کو پاکستان کی مشہور کٹھ پتلی جوڑی کے طور پر  جاناجاتا ہے۔

اظہار دکھ

وزیر اعظم عمران خان نے افسانوی خیالی کردار انکل سرگم کی آواز "فاروق قیصر "کی وفات پر دکھ کا اظہار کیا ہے۔

وزیر اعظم نے ٹویٹر پر لکھا "فاروق قیصر کی موت کے بارے میں جان کر بہت رنج ہوا” ،”وہ صرف ایک کردار نہیں تھا بلکہ معاشرتی ناانصافیوں اور مسائل کے بارے میں بھی شعور اجاگر کرتا تھا”۔

انہوں نے مزید کہا کہ میری تعزیت اور دعائیں ان کے اہل خانہ  کے ساتھ  ہیں۔

عمران خان کے  علاوہ دوسری سیاسی شخصیات جن میں مریم  نواز،بلاول زرداری ،فواد چوہدری اور دیگر شامل ہیں ،انہوں نے بھی  فاروق قیصر کے اچانک انتقال پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔

سیاسی شخصیات کے علاوہ  شوبز اور عام شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد نے بھی انکل سرگم کے انتقال پر  ان سے اپنی وابستگی کا اظہار کیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button