برآمدات میں13.50 فیصد اضافہ ،عمران خان

وزیر اعظم عمران خان  کی زیر صدارت حکومتی ترجمانوں کے اجلاس  میں  کل (پیر) کو ملک کے سیاسی و اقتصادی حالات سے متعلق اہم امور پر تبادلہ خیال  کیا  گیا۔

عمران خان نے کہا کہ حکومتی اقدامات کی وجہ سے پاکستان کی معیشت میں بہتری آرہی ہے  جس کا ثبوت یہ ہے کہ  برآمدات میں 13.50٪ کا اضافہ ہوا ہے،حکومت اپنی معاشی کارکردگی سے نہایت مطمئن ہے۔

وزیر اعظم نے  ملکی معاشی صورتحال پر  مزیدروشنی ڈالتے ہوئے کہاکہ پچھلے 10 مہینوں سے ملک کا کرنٹ کھاتہ سرپلس میں ہے۔

مزید یہ کہ آئی ٹی کی برآمد میں 44 فیصد اضافہ ہوا ہے اور سیمنٹ کی فروخت میں بھی 40 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

وزیر اعظم عمران خان نے اجلاس کے دوران کہا کہ ٹریکٹروں کی فروخت میں 58 فیصد اضافہ ہوا ہے جبکہ حکومتی اقدامات کی وجہ سے اب ملک کے کسانوں کو 1،100 بلین روپے مزید مل رہے ہیں،تاہم عالمی افراط زر کی ترسیلات نے بھی پاکستان کو متاثر کن فائدہ پہنچایا ہے۔

انہوں نے کہا  کہ کورونا وبا کے دوران عالمی سطح پر خام تیل ، پام آئل اور دیگر اشیاء مہنگی ہوگئیں ہیں ۔

عمران خان نے کہا کہ قانون کی حکمرانی اور جوابدہی پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا اور حکومت لوگوں کو ریلیف فراہم کرنے کی پوری کوشش کر تی رہے گی۔

انہوں نے مثبت معاشی اعشاریوں کا فائدہ براہ راست عوام کو پہنچانے اور آئندہ بجٹ میں  عوامی ریلیف اور ترقیاتی منصوبوں پر توجہ دینے  کا مطالبہ  بھی کیا اور ترجمانوں کو حکومتی کامیابیاں اجاگر کرنے کا ٹاسک بھی دیا۔

وزیر اعظم کی زیر صدارت  حکومتی  ترجمانوں کا اجلاس میں ماہرین کا کہنا تھاکہ پاکستان کی معیشت مسلسل  مستحکم نمو کی راہ پر گامزن ہے اور پوری دنیا میں مشکل ماحول کے باوجود اگلے پانچ سالوں میں پاکستان کی معیشت میں بہت زیادہ شرح سے ترقی کی صلاحیت ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button