لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 12 گھنٹے سے زیادہ

ملک میں گرمی کی شدید لہر کے  بعد بجلی کے شارٹ فال کا دورانیہ بھی بڑھ گیا ،مختلف شہروں میں بدترین لوڈ شیڈنگ جاری ہے۔

اسلام آباد ،لاہور ،پشاور اور کراچی  سمیت  مختلف شہروں کے بیشتر علاقوں میں گھنٹوں بجلی کی  بندش کی جارہی ہے،شہری علاقوں میں 10 اور دیہاتوں میں 14 گھنٹے کی لوڈشیڈنگ  معمول بن گئی ہے،گرم موسم میں بجلی کی بندش نے شہریوں  کے دن کا چین اور رات کا سکون چھین لیا ہے۔

بعض علاقوں میں بجلی بارہ بارہ  گھنٹے غائب رہنے لگی  ہے،جس سے عوام کی مشکلات میں اضافہ ہوگیا ہے،پاور ڈیژن کے مطابق ملک بھر میں یومیہ 4 سے8  گھنٹے بجلی کی لوڈ شیڈنگ جاری ہے۔

بجلی چوری والے علاقوں میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 12 گھنٹے سے بھی زیادہ ہے،حکام کے مطابق تربیلا ڈیم میں  پانی کی کمی کے باعث بجلی کی پیداوار  4000 میگا واٹ کم ہوگئی ہے۔

تاہم اس وقت ملک میں مجموعی طور پر 5000 میگا واٹ شاٹ  فال کا سامنا ہے،ملک میں حالیہ بجلی کی مجموعی پیداوار 19 ہزار  اور  طلب 24 ہزار میگا واٹ ہے۔

ترجمان پاور ڈویژن کے مطابق بڑے آبی ذخائر سے  پانی کے اخراج میں کمی کے باعث بجلی کی پیداوار میں کمی ہوئی ہے جسکے باعث بجلی بنانے والے 7 یونٹ بند ہوگئے ہیں۔

حکومت کی جانب سے تقسیم کار کمپنیوں کو  نظام  بہتر بنانے کی ہدایات کی جارہی ہیں   لیکن پھر بھی ملک میں ہونے والی لوڈشیڈنگز   کا دورانیہ روز بروز  طویل سے طویل تر ہوتا جارہا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button