پاکستانی ٹیم کی ماضی کی شان بحال کرنے کا عزم

لاہور: سابق کپتان رمیز راجہ نے پاکستان کرکٹ کو نئی بلندیوں پر لے جانے کے عزم کا اظہار کیا ہے وہ تین سال کی مدت کے لیے پاکستان کرکٹ بورڈ کے 36 ویں چیئرمین کے طور پر متفقہ رائے سے بلامقابلہ منتخب ہوئے ہیں ۔

پی سی بی الیکشن کمشنر جسٹس (ر) شیخ عظمت سعید نے پی سی بی کے بورڈ آف گورنرز کے خصوصی اجلاس کی صدارت کی جس کے دوران رمیز راجہ کو منتخب کیا گیا ۔

رمیز راجہ اور اسد علی خان کو ، وزیر اعظم عمران خان نے ، جو پی سی بی کے سرپرست اعلیٰ بھی ہیں ، 27 اگست کو تین سال کی مدت کے لیے پی سی بی بورڈ آف گورنرز میں نامزد کیا گیا تھا ۔

اپنے انتخاب کے بعد بی او جی کے ارکان سے خطاب کرتے ہوئے ، رمیز راجہ نے ان کی حمایت کرنے اور اس عہدے کے لیے اپنی امیدواری پر اعتماد کرنے پر ان کا شکریہ ادا کیا ۔

انہوں نے کہا کہ میں آپ سب کا شکرگزار ہوں کہ آپ نے مجھے پی سی بی کا چیئرمین منتخب کیا اور آپ کے ساتھ مل کر کام کرنے کی خوشی ہے یہ یقینی بنایا جا ئیگا کہ پاکستان کرکٹ کے میدان میں اور میدان سے باہر بھی ترقی کرے اور مضبوط ہو ۔

انہوں نے کہا کے میری ایک اہم توجہ پاکستان کی مردوں کی کرکٹ ٹیم میں وہی ثقافت ، ذہن سازی ، رویہ اور نقطہ نظر متعارف کرانے میں کردار ادا کرنا ہے جس نے پاکستان کو ایک بار بہترین کرکٹ کھیلنے والی قوموں میں شامل کر دیا تھا ۔

واضح طور پر ، ایک سابق کرکٹر کی حیثیت سے ، میری دوسری ترجیح اپنے ماضی اور موجودہ کرکٹرز کی فلاح و بہبود کو بہتر کرنا ہوگی ۔ یہ کھیل ہمیشہ اچھے کرکٹرز کو یاد رکھتا ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button