بچے بے ہوش، لوڈشیڈنگ میں مزید اضافہ

اسلام آباد  کے علاقے بہارہ کہوہ  کے علاقے میں شدید گرمی کے  موسم  میں ہونے والی طویل لوڈ شیڈنگ  کے باعث   20 سے زائد بچے بے ہوش ہوگئے۔

گورمنٹ فیڈرل اسکول بہارہ کہوہ ،اسلام آباد میں درجہ حرارت  43  ڈگری سینٹی گریڈ    ہوتے ہوئے بجلی معطل ہونے  سے ،بچوں کو گرمی کے باعث نکسیر آنا شروع ہوگئی اور 20 سے زائد بچے بے ہوش ہوگئے۔

واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے حکومت نے وفاقی (سرکاری) اسکولوں کے اوقات کار کم کردیے،اب سے تعلیمی ادارے صبح 7 بجے سے دن 11 بجے تک کھلیں گے۔

مزید یہ کہ تعلیمی ادارے صرف پیر سے جمعرات کھلیں گے جبکہ ایوننگ شفٹ والے ادارے جمعہ اور ہفتے کو بھی کھلیں گے۔

اداروں کو 50 فیصد  طلباء کی حاضری کی اجازت ہوگی تاہم تعلیمی اداروں کے وقت میں کمی کرنے کا نوٹیفیکیشن بھی جاری کر دیا گیا ہے۔

نیپرا نے بھی ملک میں ہونے والی  لوڈ شیڈنگ کا نوٹس لے لیا ہے ،تمام ڈسکوز اور کے الیکٹرک سے لوڈ شیڈنگ کی رپورٹ مانگ  لی۔

لوڈ شیڈنگ کیوں ہورہی ہے ،حقائق سے آگاہ کیا جائے،نیپرا نے بجلی کی تقسیم کا کمپنیوں سے   جواب طلب کرلیا،ہدایت کی کہ صارفین کو بجلی کی بلا تعطل فراہمی یقینی بنائی جائے۔

نیپرا نے  کے الیکٹرک سمیت تمام تقسیم کار کمپنیوں کو یہ بھی ہدایت کی ہے کہ  لوڈ شیڈنگ سے متعلق تمام حقائق سے  جمعہ تک نیپرا کو آگاہ کیا جائے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button