بٹ کوائن کی قیمت گر گئی : چین میں کریک ڈاؤن

پیر کو بٹ کوائن کی قیمت نو فیصد کے قریب گرگئی حالیہ اتار چڑھاؤ میں کرپٹو کرنسی مارکیٹ میں اتار چڑھاؤ کی کوئی معقول وجہ دکھائی نہیں دی ، مگر مارکیٹ کے بڑے کھلاڑیوں نے بٹ کوئن مائننگ پر چین کے بڑھتے ہوئے کریک ڈاؤن کو اسکی بڑی وجہ قرار دیا ہے ۔

اس وقت بٹ کوائن $32،288 کے قریب ٹریڈ ہورہا ہے ، جو 12 دن میں سب سے کم ہے ، اور اس وقت بھی 7.5 پرسنٹ نیچے ہے ۔ اگر اس کے گرنے کی یہی رفتار برقرار رہی تو یہ کمی ایک ماہ کے دوران اس کی سب سے بڑی کمی ہوگی ۔

جمعہ کے روز جنوب مغربی صوبے سیچوان میں حکام نے کریپٹوکرنسی مائننگ کے منصوبوں کو بند کرنے کا حکم دیا ہے ۔ چین کی ریاستی کونسل اور چین کی کابینہ نے گذشتہ ماہ مالی خطرات پر قابو پانے کے سلسلے میں بٹ کوائن کی مائننگ اور لین دین پر پابندی عائد کرنے کا عزم کیا تھا ۔

لندن میں مقیم کرپٹو فرم بی سی بی گروپ کے بین سیلی نے کہا ، کے چینی مائنرز کے خلاف کریک ڈاؤن کا مطلب یہ ہوسکتا ہے کہ وہ بٹ کوائن کی اہمیت کو مارکیٹ میں کم کر رہے ہیں ۔

چین میں بٹ کوائن کی پیداوار عالمی بٹ کوائن کی نصف سے زیادہ پیداوار کا حصہ ہے ۔ یونیورسٹی آف کیمبرج کے مرتب کردہ اعداد و شمار کے مطابق ، سیچوان چین کا دوسرا بڑا بٹ کوائن مائننگ والا صوبہ ہے ۔ برسات کے موسم گرما میں کچھ مائنرز اس کی پیداوار کے لیے خود کو اس صوبے میں منتقل کرلیتے ہیں تاکہ وہاں پن بجلی کے وسائل سے مالا مال ہوں ۔

ایتھیریم

اس کے بعد دوسرا بڑا کوائن ایتھیریم ہے ، جو مارکیٹ کیپٹلائزیشن کے لحاظ سے دوسری سب سے بڑی کرپٹوکرنسی ہے جو کے بٹ کوائن کے ساتھ مل کر چلتا ہے ، تقریبا ایک مہینے میں پہلی بار $2،000 سے نیچے آگرا ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button