اداکارہ نائلہ جعفری انتقال کر گئیں

مہلک بیماری کینسر کے خلاف طویل عرصے سے بر سر پیکار اداکارہ نائلہ جعفری بالآخر انتقال کرگئیں۔

اداکارہ میں ابتدائی طور پر اوورین کینسر کی تشخیص ہوئی تھی اور کچھ عرصے بعدان میں معدے کے کینسر کی بھی تشخیص ہوئی تھی۔

نائلہ جعفری  2016 سے بیمار تھیں تاہم  4 سال قبل 2017 میں ان سے متعلق یہ خبر سامنے آئی تھی کہ کینسر کے تیسرے اسٹیج کی وجہ سے انہیں  انتہائی تشویش ناک حالت میں اسپتال داخل کرایا گیا ہے۔

لیکن بعد میں یہ خبر آئی کہ نائلہ جعفری کو کچھ عرصہ اسپتال میں رکھنے کے بعد ڈسچارج کردیا گیا تھا ۔

کچھ عرصہ قبل بھی نائلہ جعفری کی ایک ویڈیو وائرل ہوئی تھی، جس میں انہوں نے ٹی وی مالکان سے  انکے ازسر نو نشر ہونے والے ڈراموں کا معاوضہ ادا کرنے کی اپیل کی تھی۔

اداکارہ کی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد بہت سے اداکاروں نے انکی تائید میں آواز بلند کی تھی اور  لوگوں نے بھی حکومت سے اپیل کی تھی کہ وہ نائلہ جعفری کی مدد کرے جس کے بعد حکومت سندھ نے نائلہ جعفری کی مدد کا اعلان کیا تھا۔

نماز جنازہ

ذرائع کے مطابق کچھ عرصے سے نائلہ جعفری کراچی کے نجی اسپتال میں زیر علاج تھیں، جہاں ان کی ایک کیموتھراپی ہوئی لیکن انفیکشن کے باعث دوسری کیموتھراپی نہ ہوسکی۔

نائلہ جعفری کی نماز جنازہ بعد نماز عشا ڈیفنس فیز ٹو میں قائم مسجد طوبیٰ میں ادا کی گئی اور تدفین کالا پل پر آرمی قبرستان میں ہوئی۔

نائلہ جعفری نے  اپنے فنی کیریئر کی ابتدا ریڈیو سے کی،بعد ازاں  1990 کی دہائی میں ٹی وی پر اداکاری کا آغاز کیا۔

ان کے مشہور ڈراموں میں اک کسک رہ گئی، تھوڑی سی خوشیاں، تیرا میرا رشتہ شامل ہیں۔

نائلہ نے اشفاق احمد کے ڈرامے "ایک محبت سو افسانے” میں بھی کام کیا، نائلہ جعفری فیشن ڈیزائیننگ بھی  کرتی تھیں۔

انتقال پر فنکار برادری کی جانب سے  اظہار افسوس کیا گیا اور مرحومہ کے فن کو خراج عقیدت بھی پیش کیا گیا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button