سمندر میں ایک طوفان بن رہا ہے : محکمہ موسمیات

محکمہ موسمیات نے اتوار کو بتایا ہے کہ پاکستان کی ساحلی پٹی خلیج بنگال کے کم دباؤ والے بادلوں سے فی الحال محفوظ ہے جس نے شدت اختیار کر کے ایک طوفان میں تبدیل ہونا شروع کر دیا ہے ۔

مگر پاکستان کے ساحلی علاقے اس سمندری طوفان سے محفوظ ہیں ، یہ محکمہ موسمیات کا کہنا ہے ۔

یہ سائیکلون کراچی سے ابھی 2200 کلومیٹر دور ہے مگر اس کی شدت میں اضافہ ہو رہا ہے ۔

سندھ میں 28 ستمبر سے 2 اکتوبر تک بارشیں ہوں گی ۔

محکمہ موسمیات کے ایک عہدیدار نے پہلے ہی کہا تھا کہ خلیج بنگال میں ایک سمندری طوفان تمام نمی کھینچ رہا ہے ، انہوں نے مزید کہا کہ موسم کی تبدیلیوں کی وجہ سے سندھ میں 28 ستمبر سے 2 اکتوبر تک شدید بارشیں ہوسکتی ہیں ۔

ایک رپورٹ کے مطابق یہ سمندری طوفان ممکنہ طور پر پاکستان کے جنوبی علاقوں میں بارش کا سبب بنے گا ۔

ماہر موسمیات مہوش پلاوت نے کہا تھا کہ خلیج بنگال پر گہرا ڈپریشن ایک طوفان میں تبدیل ہو گیا ہے ۔ ان کے مطابق سمندری طوفان عام طور پر ستمبر میں بحیرہ عرب اور خلیج بنگال میں نہیں بنتے ۔ وہ عام طور پر اکتوبر اور نومبر میں بنتے ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ سمندری طوفان کی وجہ سے ، وسطی ہندوستان اور گجرات کے بعد ، کراچی سمیت پاکستان کے جنوبی علاقوں میں بھی شدید بارش متوقع ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button