امجد صابری کی 5 ویں برسی

مقبول قوال اور نعت خواں امجد صابری کو آج (جمعرات) کو ان کی پانچویں یوم وفات پر یاد کیا جارہا ہے، انہیں 22 جون ، 2016 کو کراچی میں قتل کیا گیا تھا۔

امجد صابری کی دل گداز آواز اور انکی المناک ٹارگٹ کلنگ نے 5 سال گزر جانے کے بعد بھی قوم کو غمزدہ کردیا ہے۔ تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) کے ایک گروپ نے ، جس نے انکی وفات سے قبل امجدصابری پر توہین مذہب کا الزام لگایا تھا ، 16 رمضان کو کراچی کے لیاقت آباد کے علاقے میں انہیں نشانہ بنایا تھا۔

ٹی ٹی پی نے اس حملے کی ذمہ داری قبول کی تھی اور اس الزام کے باوجود ہزاروں افراد امجد صابری کی نماز جنازہ میں شریک ہوئے تھے۔ امجد صابری ،صابری برادران ، غلام فرید صابری اور مقبول صابری کے بیٹے اور بھتیجے تھے، اپنے بزرگوں کی طرح  امجدصابری نے بھی اپنی زندگی وقف کردی اور صوفی قوالی کی روایت کی خدمت کی۔

صابری کا سب سے مشہور کالام ‘تاجدارِ حرم’ اور ‘بھر دو جولی’ ابھی بھی ان کے مداحوں کے دلوں میں ہے، زندگی کے آخری ایام میں انہوں نے کوک اسٹوڈیو کے ساتھ ایک پروجیکٹ میں راحت فتح علی خان کے ساتھ "آج رنگ ہے”میں کام کیا ۔

لیکن بدقسمتی سے امجد صابری کوک اسٹوڈیو کے انتہائی منتظر پروجیکٹ کی ریلیز کا مشاہدہ نہیں کرسکے۔ عاجز فطرت اور مسحور کن آواز کے حامل شخص کو 22 جون اور 16 رمضان 2016 کو گولی مار کر ہلاک کردیا گیا ،  جو یقیناً پوری قوم کے لئے ایک غمگین دن تھا۔

Back to top button