آرمی کے 5 جوان شہید ، آئی ایس پی آر

جمعہ کو فوج کے میڈیا امور کے ونگ نے بتایا کہ ضلع سبی کے علاقے سانگن میں دہشت گردوں کی جانب سے ایک فوجی گشتی پارٹی کو نشانہ بنائے جانے کے نتیجے میں ، بلوچستان سرحدی کور کے پانچ فوجی جوان شہید ہوگئے ہیں ۔

انٹر سروسز پبلک ریلیشن (آئی ایس پی آر) نے ایک بیان میں کہا ، کہ فائرنگ کے تبادلے کے دوران دہشت گردوں کو بھی بھاری نقصان پہنچا ہے ۔

شہید ہونے والے پانچ فوجیوں کی شناخت حوالدار ظفر علی خان ، لانس نائک ہدایت اللہ ، لانس نائک ناصرعباس ، لانس نائک بشیراحمد اور سپاہی نور اللہ کے نام سے ہوئی ہے ۔

آئی ایس پی آر نے کہا ہے کہ ، دہشت گردوں کے فرار ہونے کے راستوں کو روکنے اور قصورواروں کو پکڑنے کے لئے سینیٹائزیشن / سرچ آپریشن بھی جاری ہے ۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ دشمنوں کی خفیہ ایجنسیوں کے حمایت یافتہ غیر قانونی عناصر کی طرف سے ایسی بزدلانہ حرکتیں ، بلوچستان میں امن اور خوشحالی کو سبوتاژ نہیں کر سکتی ہیں ۔

دشمن اس واقعہ سے یہ نتیجہ اخذ کر لینا چاہیے ، کے سیکیورٹی فورسز کے جوان خون اور جانوں کی قیمت دے کر انکے مذموم مقاصد کو بے اثر کرنے کے لئے پرعزم ہیں ۔

وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے دہشت گرد حملے کی مذمت کرتے ہوئے شہید فوجیوں کے لئے دعا کی ۔

انہوں نے کہا ، کے دہشت گرد ایسے بزدلانہ حملے کر کے ہمیں مایوس نہیں کرسکتے ہیں ۔ ریاست دہشت گردوں کے خلاف لڑے گی اور اپنی پوری طاقت سے کام کرے گی ۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایف سی بلوچستان نے ملکی سلامتی اور امن کے لئے بڑی قربانیاں دی ہیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button