کراچی الیکٹرک بسوں کے لئے 6.5 ارب روپے مختص

سندھ حکومت نے مالی سال 2021-22 کے لئے اپنے نئے بجٹ میں کراچی کے لئے برقی بسوں کی خریداری کے لئے ساڑھے 6 ارب روپے مختص کر رکھے ہیں۔

منگل کے روز اپنی بجٹ تقریر میں ، وزیر اعلی سید مراد علی شاہ نے کہا کہ ایک جدید شہر میں ایک جدید ٹرانسپورٹ سسٹم کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا ، کے بدقسمتی سے ، کراچی کو آج تک کوئی اچھا ٹرانسپورٹ سسٹم فراہم نہ کیا جاسکا ہے ۔

ہم کبھی نہ ختم ہونے والے الزام تراشی کے کھیل میں مشغول رہتے ہیں۔ لیکن اب ہم اپنا وقت ضائع نہیں کریں گے ۔ اس سے قبل بھی ہم نے کراچی کے لئے ایک سے زیادہ ماس ٹرانزٹ پروگراموں کو منظم کیا ہے اور اب ہم ان پروگراموں کو تیز تر کریں گے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ حکومت سندھ کے اگلے مالی سال کے سالانہ ترقیاتی پروگرام میں شہر میں بس ریپڈ ٹرانزٹ سروس کی راہداریوں کی تعمیر کے لئے 8.2 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔

ہم گرین لائن اور بی آر ٹی ایس کی تعمیر کے لئے اپنی حمایت میں توسیع کرنے پر وفاقی حکومت کے بھی مشکور ہیں ، لیکن ہم توقع کرتے ہیں کہ حکومت کراچی شہر کی ترقی کے لئے اپنے عزم پر قائم رہے گی ۔

نئے بجٹ میں کراچی سرکلر ریلوے منصوبے کے راستے پر ریلوے کراسنگ پر انڈر پاس اور اوورہیڈ پلوں کی تعمیر کے لئے 2 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔ اس میں سندھ انٹرا ڈسٹرکٹ پیپلز بس سروسس پروجیکٹ کے تحت 250 ڈیزل ہائبرڈ الیکٹرک بسوں کی خریداری کے لئے بطور گرانٹ ان ایڈ 67 بلین روپے مختص کیے گئے ہیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button